site
stats
خواتین

خیبر پختونخواہ میں خواتین کے لیے علیحدہ بس سروس

اسلام آباد: اقوام متحدہ اور جاپانی سفارت خانے نے خیبر پختونخواہ میں خواتین کے لیے خصوصی ٹرانسپورٹ کے منصوبے پر باہمی اشتراک سے کام شروع کرنے کے لیے متعلقہ دستاویزات پر دستخط کردیے ہیں۔

دارالحکومت اسلام آباد میں منعقدہ تقریب میں اکنامک افیئرز ڈویژن، کمیشن برائے منصوبہ بندی پاکستان، خیبر پختونخوا کے شعبہ ٹرانسپورٹ اور پاکستان میں تعینات اقوام متحدہ کے مختلف نمائندگان نے شرکت کی۔

مزید پڑھیں: خواتین کی ڈرائیونگ پر عائد پابندی ختم کی جائے، سعودی شہزادے کا مطالبہ

صوبے بھر میں چلائی جانے والی یہ بسیں صرف خواتین کے لیے مختص ہوں گی۔

یہ منصوبہ اقوام متحدہ کے پروجیکٹ سروسز ادارے یو این او پی ایس، اقوام متحدہ کے ادارہ برائے خواتین یو این وومین اور خیبر پختونخواہ کے شعبہ ٹرانسپورٹ کے اشتراک سے شروع کیا جارہا ہے جبکہ اس کے لیے مالی معاونت جاپانی حکومت کی جانب سےفراہم کی جائے گی۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان میں تعینات اقوام متحدہ کے کو آرڈینیٹر نیل بنہی نے بتایا کہ ٹرانسپورٹ سروس برائے خواتین کا مقصد خواتین کو محفوظ اور آرام دہ سفری سہولیات فراہم کرنا ہے۔ ’اس اقدام سے انہیں گھر سے باہر ہراسمنٹ اور چھیڑ چھاڑ کے واقعات سے بچایا جاسکے گا‘۔

یو این او پی ایس کے پاکستان میں تعینات نمائندہ محمد حیدر رضا کا کہنا تھا کہ مخلوط سفری سہولیات میں کام کرنے والی خواتین اور طالبات کو مرد مسافروں، بس ڈرائیوروں اور کنڈکٹرز کی جانب سے ںامناسب رویے کا سامنا ہوتا ہے جبکہ خواتین کو جنسی طور پر ہراساں کیے جانے کے واقعات کی شرح بھی پبلک ٹرانسپورٹ میں زیادہ ہے۔

مزید پڑھیں: عوامی مقامات پر خواتین کی ہراسمنٹ سے بچاؤ کے لیے اہم اقدام

انہوں نے کہا کہ خواتین کے لیے شروع کیے جانے والے اس منصوبے میں شرکت یو این او پی ایس کے لیے اعزاز کی بات ہے۔

خیبر پختونخواہ کے شعبہ ٹرانسپورٹ کے نمائندگان کا کہنا ہے کہ یہ منصوبہ خیبر پختونخواہ میں شروع کیے جانے والے ماس ٹرانزٹ سسٹم کا حصہ ہے۔ ’ہمیں خوشی ہے کہ ہم خواتین کو علیحدہ اور محفوظ سفری سہولیات فراہم کرنے کے قابل ہوسکیں گے‘۔

منصوبے کے تحت خیبر پختونخواہ کے 3 ضلعوں پشاور، مردان اور ایبٹ آباد میں بس سروس شروع کی جائے گی۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top