The news is by your side.

Advertisement

کلائمٹ چینج سے خواتین سب سے زیادہ متاثر

فرانس کی وزیر برائے توانائی اور کوپ 21 کی صدر نے کہا ہے کہ خواتین موسمیاتی تبدیلیوں یعنی کلائمٹ چینج سے زیادہ متاثر ہوتی ہیں۔

A-2

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق سیگولین رائل نے مطالبہ کیا ہے کہ پیرس معاہدے میں اس بات کو شامل کرنا چاہیئے کہ خواتین کلائمٹ چینج سے سب سے زیادہ متاثر ہیں چنانچہ ان کے لیے خصوصی اقدامات کیے جائیں۔

d

فرانسیسی وزیر کا کہنا تھا کہ خواتین گلوبل وارمنگ کا سب سے پہلا شکار ہوتی ہیں یہی وجہ ہے کہ حکومتوں کو ماحولیاتی اداروں میں خواتین کی نمائندگی میں اضافہ کرنا چاہیئے۔ یہی نہیں بلکہ خواتین ہی اس حوالے سے مختلف اور پائیدار حل تجویز کرتی ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ خواتین کے لیے زرعی اسکول اور ماحول دوست کچن قائم کرنے کی ضرورت ہے جبکہ دوبارہ قابل استعمال توانائی کے بارے میں بھی انہیں آگہی فراہم کی جائے۔

مزید پڑھیں: ماحولیاتی تبدیلیوں کا جائزہ لینے کے لیے سیٹلائٹ لانچ

رائل نے کہا کہ اس کی ایک مثال 2004 میں آنے والا سونامی تھا جس میں متاثرین کی بڑی تعداد خواتین پر مشتمل تھی۔ ان خواتین کو تیرنا نہیں آتا تھا اور جب امدادی کارروائیاں شروع ہوئیں تو انہوں نے پہلے اپنے بچوں کو بچایا۔ انہوں نے خبردار کیا کہ قدرتی آفات سے متعلق خواتین کو آگہی دینا نہایت ضروری ہے۔

c

اس سے قبل عالمی یوم ارض کے موقع پر کلائمٹ چینج کے اثرات سے نمٹنے کے لیے پیرس میں ایک تاریخ ساز معاہدے پر دستخط کیے جاچکے ہیں۔

معاہدے کے بارے میں مزید جانیں: پیرس معاہدہ

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں