site
stats
سندھ

خواتین پرحملے : ملزم کی عدم گرفتاری پرایم کیو ایم سراپا احتجاج

knife attack

کراچی : ایم کیوایم پاکستان نے خواتین پر چھری سے حملہ کرنے والے ملزم کی عدم گرفتاری کے خلاف اورخواتین سے اظہار یکجہتی کے لئے جوہر موڑ پر احتجاجی مظاہرہ کیا، مظاہرین نے مطالبہ کیا کہ ملزم کو چوبیس گھنٹوں کے اندر گرفتار کیا جائے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں چھری مارکرخواتین کو زخمی کرنے کی وارداتوں پر سیاسی جماعتیں بھی احتجاج پر اتر آئیں، ملزم کی گرفتاری میں پولیس اور متعلقہ ادارے تاحال ناکام ہیں۔

اس حوالے سے ایم کیوایم پاکستان نے حملوں کے خلاف اور خواتین سے اظہار یکجہتی کے لئے گلستان جوہر میں جوہر موڑ پر احتجاجی مظاہرہ کیا۔

مظاہرے کے شرکاء نے بینرز اور پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے، جس میں احتجاجی نعرے درج تھے، انہوں نے حملہ آور کی عدم گرفتاری پر صوبائی حکومت کے خلاف نعرے بھی لگائے۔

مظاہرے میں اراکین رابطہ کمیٹی اوراراکین پارلیمینٹرین بھی شریک ہوئے، مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے ایم کیوایم کے رہنما اور اپوزیشن لیڈر سندھ اسمبلی خواجہ اظہار نے کہا کہ حملوں کے معاملے پر تمام خواتین ایک پیج پر ہیں۔

انہوں نے کہا کہ خواتین خوف کا شکار ہیں باہر بھی نہیں جاسکتی ہیں، خواجہ اظہار الحسن نے وزیراعلی سندھ سے مطالبہ کیا کہ ملزم کو چوبیس گھنٹوں میں گرفتار کیا جائے۔

اس موقع پر مزمل قریشی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ شہر میں خواتین پر حملوں کے واقعات پر تشویش ہے، عوام کو تحفظ دینا حکومت کی ذمہ داری ہے، انہوں نے کہا کہ حملہ آور کی عدم گرفتاری سندھ حکومت کی ناکامی ہے۔


مزید پڑھیں: چاقو بردار ملزم کے تین گھنٹے کے دوران پانچ خواتین پر وار


کشور زہرہ کا کہنا تھا کہ ماؤں، بہنوں کی حفاظت ہم سب کی ذمہ داری ہے، حملے کے بعد خواتین گھر سے باہر نکلنے میں ڈر اور خوف محسوس کر رہی ہیں۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top