لبنان میں ’ونڈر ویمن‘ کی ریلیز پر پابندی عائد -
The news is by your side.

Advertisement

لبنان میں ’ونڈر ویمن‘ کی ریلیز پر پابندی عائد

ہالی وڈ کی عنقریب ریلیز ہونے والی فلم ’ونڈرویمن‘ پر لبنان نے پابندی عائد کردی ہے‘ پابندی کی وجہ مرکزی کردار گیل گاڈوٹ کا اسرائیلی فوج سے تعلق ہونا بتایا جارہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق لبنانی حکام نے پریمیئر سے چند گھنٹے قبل فلم ’ونڈر ویمن‘ کی ریلیز پر پابندی عائد کردی جس کے بعد سینما مالکان نے فلم کے پوسٹر اتاردیئے۔

مقامی میڈیا ذرائع کے مطابق حکام کا کہنا ہے کہ پابندی کا سبب فلم کا مرکزی کردار ‘ اداکارہ گیل گاڈوٹ ہیں جوکہ اسرائیلی فوج میں اپنی خدمات پیش کرچکی ہیں۔

یاد رہے کہ لبنان اوراسرائیل باضابطہ طور پر حالتِ جنگ میں ہیں‘ دونوں کے درمیان کئی بار لڑائی چھڑ چکی ہے خصوصاً 2006 میں اسرائیل نے لبنان پر بے پناہ بمباری کی تھی جس سے سینکڑوں شہری شہید ہوئے تھے جبکہ انفرااسٹرکچر کو بھی شدید نقصان پہنچا تھا۔


دنیا کو تباہی سے بچانے والی حیرت انگیزعورت


 لبنان میں اسرائیلی مصںوعات کے استعمال اور شہریوں پر اسرائیل کا سفر کرنے پر پابندی عائد ہے اورحکومت اسرائیل کے ساتھ کسی بھی قسم کے تعلقات نہیں چاہتی۔

پابندی لگنے کے بعد گزشتہ روز ہونے والا پریمئر شو کینسل کردیا گیا اور متعلقہ تقسیم کار کمپنی کو آگاہ کیا گیا جس نے سینما مالکان تک حکومتی پابندی کا حکم نامہ پہنچایا۔

فلم کی ریلیز کے خلاف مہم چلانے والی رانیا مصری کا کہنا ہے کہ ونڈر ویمن پر پابندی خوش آئند ہے اور اس سے قانون کے احترام کا اظہار ہوتا ہے ‘ حالانکہ یہ فیصلہ بہت دیر سے آیا تاہم اچھی بات یہ ہے کہ فلم کی باضابطہ لانچ سے قبل کرلیا گیا۔

یاد رہے کہ فلم کی مرکزی کردار گیل گاڈوٹ فلمی دنیا میں آنے سے قبل اسرائیلی فوج میں اپنی خدمات پیش کرچکی ہیں جس کے سبب لبنان نے فلم کا بائیکاٹ کیا ہے۔

اس سے قبل بیٹ مین ورسز سپر مین بھی گیل کی موجودگی کے سبب پابندی کے لیے مہم چلائی گئی تھی تاہم اس وقت اس مہم کے مثبت نتائج برآمد نہیں ہوئے تھے تاہم رانیا کے مطابق اب کی بار اس مہم میں میڈیا کی شرکت سے مثبت نتائج برآمد ہوئے۔


اگرآپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اوراگرآپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پرشیئرکریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں