The news is by your side.

Advertisement

ورلڈ بینک کی سندھ طاس منصوبے پر ثالثی کی پیشکش

نیویارک : عالمی بینک کا سندھ طاس معاہدے پر ثالثی کی پیشکش کر دی جبکہ کشن گنگا ڈیم کے تنازع پر عالمی بینک نے غیر جانبدار ماہرین بھی تجویز کر دیے ہیں۔

عالمی بینک نے پاکستان اور بھارت کے درمیان ثالثی کی پیشکش کرتے ہوئے پاکستان اور بھارت پر زور دیا ہے کہ وہ سندھ طاس معاہدے کی خلاف ورزی کا معاملہ خوش اسلوبی سے حل کرے۔

عالمی بینک نے کشن کنگا ڈیم پر غیر جانبدار ماہرین کی تقرری کا اعلان کرتے ہوئے تین ممکنہ ماہرین کے نام تجویز کردیئے تاکہ دونوں ممالک ان سے کسی ایک ماہر کا انتخاب کرسکیں۔

بینک کا کہنا ہے کہ دونوں ممالک عدالت جانے سے پہلے ثالث کے ذریعے معاملہ حل کریں۔

یاد رہے کہ پاکستان اور بھارت نے کشن گنگا ڈیم کے تنازع پر عالمی بینک کے غیرجانبدار ماہر کے تقرر کیلئے عالمی بینک سے رجوع کیا تھا۔


مزید پڑھیں :  سندھ طاس معاہدہ،پاکستان کا عالمی ثالثی عدالت سے رجوع کرنے کافیصلہ


خیال رہے کہ واضح رہے کہ پاکستان گذشتہ ڈھائی برس سے ہندوستان سے پانی کےتنازع کو حل کےلیے مذاکرات کررہاتھا جس میں جوئی پیش رفت نہ ہوسکی۔

واضح رہے کہ سال 1960ء میں طے پانے والے سندھ طاس معاہدے کے تحت انڈیا کو مشرقی دریاؤں یعنی ستلج، راوی اور بیاس جب کہ پاکستان کو مغربی دریاؤں جہلم، چناب اور سندھ کو استعمال کرنے کے حقوق دیے گئے تھے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں