site
stats
بزنس

رواں سال پاکستان کی معاشی شرح نمو پانچ اعشاریہ دو فیصد ہوجائے گی ،عالمی بینک

نیویارک : عالمی بینک نے پیشگوئی کی ہے کہ رواں سال پاکستان کی معاشی شرح نمو پانچ اعشاریہ دو فیصد ہوجائے گی جبکہ آئندہ سال اس میں مزید بہتری متوقع ہے۔

عالمی بینک کی جانب سے جاری اعداد وشمار کے مطابق پاکستان کی سال  2018 اور19  میں معاشی شرح نمو بڑھ کر ساڑھے پانچ اور پانچ اعشاریہ آٹھ فیصد تک ہوجائے گی،  پاک چین اقتصادری راہدای معاشی ترقی میں اضافے کا باعث بنے گی، منصوبے سے تعمیرات اور صنعتی شعبے مزید ترقی کرے گا۔

بینک کا کہنا تھا کہ غربت میں کمی اور مستحکم معاشی ترقی کیلئے دور رس پالیساں، نجی سیکٹر کی سرمایہ کاری اور انفراسٹرکچر ڈیویلپمنٹ ضروری ہے۔


مزید پڑھیں : عالمی بینک کی سال 2017 کی پہلی گلوبل اکنامک رپورٹ جاری


رواں سال کے آغاز میں عالمی بینک نے رواں سال کی پہلی گلوبل اکنامک رپورٹ جاری کردی، پاکستان کی معاشی ترقی پانچ اعشاریہ دو فیصد جبکہ عالمی شرح نمو دو اعشاریہ سات فیصد رہے گی۔

ورلڈ بینک کی گلوبل اکنامک پراسپیکٹ رپورٹ کے مطابق بھارت کی معاشی ترقی کی شرح سات فیصد رہے گی، بھارتی معشیت کے سات اعشاریہ چھ تک رہنے کی توقع تھی، شرح نمو میں کمی کی وجہ نوٹوں کی بندش جو کہ معاشی سرگرمیاں متاثر کرنے کا باعث بنی۔

پورٹ کے مطابق تیل کی قیمتوں میں استحکام سے روس اور برازیل میں معاشی بحران ختم ہونے کی امید ہے تاہم نئے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی پالیسیاں امریکی معاشی شرح نمو میں کمی کا باعث بن سکتی ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top