site
stats
بزنس

امریکہ کے بعد عالمی بینک نے بھی پاکستان کیلئے قرضے کی فراہمی روک دی

 واشنگٹن : امریکہ کے بعد عالمی بینک نے بھی پاکستان کیلئے قرضے کی فراہمی ورک دی پچیس کروڑ ڈالر کا یہ قرضہ ڈیزاسٹر رسک مینج منٹ کیلئے دیا جانا تھا۔

تفصیلات کے مطابق امریکہ کی جانب سے تعاون ختم کئے جانے کے بعد عالمی بینک نے بھی پاکستان کیلئے قرضے کی فراہمی ورک دی، عالمی بینک کےڈیولپمنٹ پالیسی کریڈٹ کی پراجیکٹ انفارمیشن دستاویزات کے مطابق پاکستان کودیا جانے والا پچیس کروڑ ڈالر کا قرضہ روک لیا گیا ہے۔

قرضہ ڈیزاسٹر رسک مینجمنٹ کیلئے دیا جانا تھا، جائزہ ٹیم نے منصوبہ پرعمل درآمد روک دیا۔

عالمی بینک دستاویز کے مطابق پاکستان کو میکرو اکنامک رسک کا سامنا ہے، پاکستان کے بیرونی کھاتوں پر بڑھتا ہوا دباو بھی تشویش کا باعث ہے، تجارتی اور جاری کھاتوں کا خسارہ بڑھ رہا ہے جبکہ زرمبادلہ ذخائر میں مسلسل کمی آرہی ہے۔

معاشی ماہرین کا کہنا ہے کہ آئی ایم ایف کی رائے عالمی بینک کے فیصلوں پر اثر انداز ہوتی ہے، آئی ایم ایف نے بھی پاکستان کو میکرواکنامک رسک کے بارے میں نشاندہی کی تھی۔

خیال رہے کہ ملکی معیشت مسائل کا شکار ہے اور بڑھتے ہوئے جاری اخراجات کے ساتھ ساتھ تجارتی خسارہ میں بھی مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔


مزید پڑھیں :  جولائی تا دسمبر :تجارتی خسارے میں 20فیصد اضافہ


وفاقی ادارے شماریات کے مطابق رواں مالی سال کے پہلے چھ ماہ میں تجارتی خسارے کا حجم سترہ ارب ستانوے کروڑ ڈالر رہا، زیرغورعرصے میں ملکی درآمدات کا حجم انیس فیصد اضافے کے ساتھ اٹھائیس ارب ستاون کروڑ ڈالر رہا۔

یاد رہے گذشتہ ماہ ہی حکومت کی جانب سے عالمی بینک سے زرعی شعبے کیلئے تیس کروڑ ڈالر کا قرضہ حاصل کیا تھا، عالمی بینک اعلامیہ کے مطابق زراعت میں بہتری کیلئے اس منصوبے سے ساڑھے تین لاکھ افراد کو روزگار مے گا جبکہ غربت میں کمی آئے گی۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر ضرور شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top