The news is by your side.

Advertisement

مسکرائیے! کہ یہ زندگی کو سہل بناتی ہے

آج کل کی تیز رفتار زندگی اور نت نئی پریشانیوں نے ہم سے ہماری مسکراہٹ چھین لی ہے، ماہرین کا کہنا ہے کہ ہنسنے، مسکرانے اور خوش رہنے کا تعلق ہماری اچھی صحت سے ہے اور یہ ہماری جسمانی و ذہنی صحت پر مثبت اثرات مرتب کرتے ہیں۔

آج یعنی ماہ اکتوبر کے پہلے جمعے کو جب دنیا بھر میں مسکراہٹ کا عالمی دن منایا جارہا ہے تو ایک دوسرے کے ساتھ مسکراہٹوں کا تبادلہ کرنا تو ضروری ہے ہی، لیکن اس مسکراہٹ کے فوائد جاننا بھی ضروری ہیں تاکہ آپ نہ چاہتے ہوئے بھی مسکرا اٹھیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ ہنسنا مسکرانا ہماری صحت کے لیے اتنا ہی ضروری ہے جتنا ورزش کرنا، یا صحت مند غذا کھانا۔

مسکراہٹ متعدی مرض کی طرح ایک سے دوسرے شخص کو لگتی ہے۔ اگر آپ اکیلے بھی مسکرائیں گے تب بھی آپ کے قریب موجود شخص آپ کو دیکھ کر یقیناً مسکرائے گا۔

مسکراہٹ آپ کے ذہنی تناؤ اور بے چینی کو کم کرتی ہے۔

مسکراہٹ آپ کے چہرے کی کشش میں اضافہ کرے گی۔

مسکراہٹ آپ کی قوت مدافعت میں اضافہ کرتی ہے۔

مسکراہٹ آپ کے مغرور یا خشک ہونے کے تاثر کو ختم کرتی ہے اور لوگ آپ سے بات کرنے میں آسانی محسوس کرتے ہیں۔

مسکرانے والے افراد کو لوگ زیادہ قابل اعتبار سمجھتے ہیں اور لاشعوری طور پر ان سے قربت محسوس کرتے ہیں۔

ایک تحقیق کے مطابق اگر آپ جھوٹی مسکراہٹ بھی اپنے چہرے پر سجائیں اور جھوٹی ہنسی ہنسیں تو آپ کا دماغ اس دھوکے میں آجائے گا کہ آپ خوش ہیں۔

اس کے بعد وہ قدرتی طور پر آپ کے ذہنی تناؤ اور فکر کو کم کر کے ایسے ہارمونز پیدا کرے گا جو آپ کو خوش رکھنے میں مددگار ثابت ہوتے ہیں۔

مسکراتے ہوئے آپ کے چہرے کے تمام عضلات حرکت میں آجاتے ہیں۔ آپ نے دیکھا ہوگا کہ بعض افراد کا چہرہ بالکل سپاٹ ہوتا ہے اور اس پر کوئی تاثر نہیں آتا۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ ان کے چہرے کے عضلات حرکت نہ کرنے کے باعث اکڑ جاتے ہیں۔

اس سے چھٹکارہ حاصل کرنے کا آسان طریقہ یہ ہے کہ مسکرانے کی عادت ڈالیں تاکہ آپ کے عضلات حرکت میں رہیں اور آپ کا چہرہ بے جان یا بے تاثر نہ دکھائی دے۔

مسکراہٹ چہرے کے عضلات کو آرام بھی پہنچاتی ہے۔ اس کے برعکس تیوری چڑھانا یا غصہ کے تاثرات میں چہرہ بے آرام رہتا ہے اور تکلیف محسوس کرتا ہے۔

تو پھر آج کا دن مسکراہٹوں کے نام کیجیئے، خود بھی مسکرائیں اور اپنی مسکراہٹ سے دوسروں کو بھی مسکرانے پر مجبور کردیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں