کوریا میں دنیا کا پہلا ’’ورچوئل گروسری اسٹور‘‘ قائم کردیا گیا
The news is by your side.

Advertisement

کوریا میں دنیا کا پہلا ’’ورچوئل گروسری اسٹور‘‘ قائم

کوریا : دنیا کی پہلی ورچوئل دکان قائم کردی گئی ہے جہاں سے اشیاء خورد و نوش کو اسکین کر کے خریدا جا سکے گا جہاں فروخت کی جانے والی اشیاء کسی اسٹال یا شوکیس میں نہیں بلکہ ایل سی ڈی اسکرین پر موجود ہوں گی۔

تفصیلات کے مطابق کوریا میں اشیاء خورد نوش اور روز مرہ استعمال کی چیزوں کی فروخت کے لیے دنیا کی پہلی ’’ورچوئل گروسری اسٹور‘‘ کا قیام عمل میں لایا گیا ہے جہاں خریدنے کے لیے کوئی بھی چیز حقیقی طور پر موجود نہیں ہوتی بلکہ ایک بڑی ایل سی ڈی پر تصاویر کی صورت میں موجود ہوتی ہیں جس پر قیمت بھی آویزاں ہوتی ہے۔

خریدار ایل سی ڈی اسکرین سے اپنی مطلوبہ اشیاء کو منتخب کر کے اپنے اسمارٹ فون کی مدد سے اسے ’’اسکین‘‘ کر کے خرید سکتے ہیں جسے گودام سے لا کر پیک کیا جاتا ہے اور گاہک کے حوالے کردیا جاتا ہے جب کہ اسمارٹ کارڈ سے ادائیگی کرنے کی سہولت بھی میئسر ہو گی۔

منتظمین کا کہنا ہے کہ یہ ایک کامیاب تجربہ رہا ہے جس کا خیال جگہ کی عدم دستیابی کے باعث آیا کیوں کہ اشیاء کو اصلی حالت میں رکھنے میں جگہ زیادہ استعمال ہوتی ہے اور گاہک بھی ٹرالیاں لیے پورے مال میں گھومتے ہیں جس سے مشکلات بھی بڑھ جاتی ہیں اور وقت کا ضیاع بھی ہوتا ہے۔

اسی لیے فروخت کے لیے موجود تمام اشیاء کی تصاویر کو قیمت کے ساتھ ایک سوفٹ ویئر کے ذریعے ایک بڑی ایل سی ڈی پر آویزاں کردیا گیا ہے جس کے لیے زیادہ جگہ کی ضرورت نہیں بس خریدار اپنے موبائل سے مطلوبہ اشیاء اسکین کر لیں گے جو گودام سے پیک کر کے ان کے حوالے کردی جائیں گی۔

منتظمین نے مزید کہا کہ اس طرح سے نہ صرف یہ کہ جگہ کی بچت ہوتی ہے بلکہ سپر اسٹور میں موجود ہر ایک گاہگ کے لیے مختلف سائز کی باسکٹس اور ٹرالی رکھنے کی بھی ضرورت پیش نہیں آتی جو کہ ہجوم اور پریشانی کا باعث بنتی ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں