site
stats
سندھ

وفاق نے کبھی حوصلہ افزائی نہیں کی، قائم علی شاہ

کراچی: سابق وزیر اعلیٰ  سندھ سید قائم علی شاہ کا کہنا ہے کہ وفاقی حکومت نے ہمیں مایوس کیا، اگر مرکزی حکومت تعاون کرتی تو صوبائی حکومت ہزار میگا واٹ کے2 منصوبے لگا چکی ہوتی.

تفصیلات کے مطابق سابق وزیر اعلیٰ سندھ قائم علی شاہ کا کہنا ہے کہ کوئلہ پڑا رہا کسی نے بجلی پیدا کرنے کا نہیں سوچا تاہم اس سے بجلی پیدا کرنے کا قدم بھی سندھ حکومت نے اٹھایا۔

انہوں نے کہا کہ کوئلے سے بجلی بنانے کا کہہ دینا آسان کام ہے تاہم اسے عملی جامہ پہنانا بچوں کا کھیل نہیں اور اب چین کوئلے سے بجلی پیدا کرنے کے منصوبوں میں دلچسپی لے رہا ہے۔

سابق وزیر اعلیٰ نے کہا کہ تھر میں بجلی پیدا کرنے کا ڈھائی ارب روپے کا منصوبہ ہے جس کے لیے چین کے تعاون سے انشااللہ ہم 2018 میں کوئلے سے بجلی پیدا کرنے کے قابل ہوجائیں گے۔

قائم علی شاہ کا کہنا تھا کہ وفاقی حکومت نے ہمیں مایوس کیا ہے حالانکہ ہم نے پیشکش کی تھی کہ وفاقی حکومت پاور پلانٹ کہیں بھی لگائیں مگرکوئلہ سندھ کا استعمال کریں تاہم بد قسمتی سے ایسا نہیں ہوا کوئلہ باہر سے منگوایا جا رہا ہے۔

قائم علی شاہ نے وفاقی حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ وفاق تعاون کرتا تو ہزار میگا واٹ کے 2 منصوبے لگا چکے ہوتے لیکن وفاق نے استفادہ نہیں کیا جب کہ سب جانتے ہیں کہ پن بجلی اور کوئلہ صوبہ سندھ کے وسائل ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top