The news is by your side.

Advertisement

چینی صدر کا رتبہ ماؤزئے تنگ کے برابر قرار دے دیا گیا

بیجنگ: چین کے صدر شی جن پنگ کا رتبہ ماؤزئے تنگ کے برابر قرار دے دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق چین کی حکمراں جماعت کمیونسٹ پارٹی نے ایک تاریخی قرارداد کے ذریعے صدر شی جن پنگ کا رتبہ چینی کمیونسٹ انقلابی رہنما ماؤزے تنگ اور ڈینگ زیاؤپنگ کے برابر قرار دے دیا ہے۔

پارٹی کی جانب سے اپنی نوعیت کی اس تیسری قرارداد کے بعد صدر شی کی اقتدار پر گرفت ہمیشہ کے لیے مضبوط ہو گئی ہے۔

قرارداد کی طویل دستاویز میں پارٹی کی تاریخ کے درست نقطۂ نظر کو برقرار رکھنے پر زور دیتے ہوئے، چینی سماج اور اداروں سے اپیل کی گئی کہ وہ صدر کے ساتھ کاندھے سے کاندھا ملا کر چلیں۔

قرارداد میں شی جن پنگ کے نظریے کو چینی ثقافت اور روح کا نچوڑ قرار دیا گیا، کہا گیا کہ حکمراں جماعت کے قلب میں شی جن پنگ کی موجودگی اس حوالے سے فیصلہ کن اہمیت کی حامل ہے، کہ اس جماعت نے چینی قوم میں ایک نئی روح اور جوش پیدا کرنے کے تاریخی عمل کو فروغ دیا۔

پارٹی کی فیصلہ ساز کمیٹی نے پوری جماعت، پوری فوج اور تمام نسلی گروپس سے تعلق رکھنے والے افراد کو شی جن پنگ کی قیادت میں پارٹی سینٹرل کمیٹی کے ساتھ پوری طرح متحد ہونے کی اپیل بھی کی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں