The news is by your side.

Advertisement

صحت کے رکے ہوئے منصوبے بحال، پہلے مرحلے میں 72 لاکھ صحت کارڈز کی تقسیم شروع

گوجرانولہ: وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا ہے کہ ہم نے صحت کے رکے ہوئے منصوبوں کو بحال کیا، پہلے مرحلے میں 72 لاکھ صحت کارڈز کی تقسیم شروع کر دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق آج وزیر صحت پنجاب یاسمین راشد نے گوجرانوالہ میں وزیر آباد انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی کا دورہ کیا، اس موقع پر انھوں نے کہا حکومت صحت کے شعبے میں انقلاب لا رہی ہے۔

یاسمین راشد کا کہنا تھا رواں سال 30 ہزار نئے ڈاکٹرز و دیگر اسٹاف کو بھرتی کیا گیا ہے، انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی کو 200 بیڈز پر مکمل فنکشنل کر رہے ہیں۔

پنجاب میں ڈینگی کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے جاری مہم کے حوالے سے انھوں نے کہا کہ ڈینگی کا اسپرے ان علاقوں میں کیا جاتا ہے جہاں لاروا کی نشان دہی ہو، بلا ضرورت ڈینگی اسپرے صحت کے لیے نقصان دہ ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  22 لاکھ صحت کارڈ تقسیم کر دیے، مزید 90 لاکھ تقسیم کریں گے: وفاقی وزیر صحت

انھوں نے قومی ایشوز پر بھی بات کی، ڈاکٹر یاسمین راشد نے آزادی مارچ کے تناظر میں کہا کہ فضل الرحمان کشمیر کے لیے دھرنا دیں، وہ کشمیر کمیٹی کے چیئرمین رہ چکے ہیں۔

وزیر صحت پنجاب کا یہ بھی کہنا تھا کہ سابق حکومت جان بوجھ کر مصنوعی طور پر مہنگائی کو روکتی رہی، بے روزگاری پر قابو پانے کے لیے حکومت ترجیحی بنیادوں پر کام کر رہی ہے۔

یاد رہے کہ 22 لاکھ صحت کارڈز پہلے ہی تقسیم کیے جا چکے ہیں، جب کہ رواں سال 90 لاکھ صحت کارڈز تقسیم کرنے کی منصوبہ بندی کی گئی ہے، وزیر اعظم عمران خان نے کہا تھا کہ صحت کارڈ سے غریب افراد 7 لاکھ 20 ہزار میں اپنا علاج کرا سکیں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں