The news is by your side.

Advertisement

یمنی وزیر اطلاعات کا مارٹن گریفتھس پر حوثیوں‌ کی جانبداری کا الزام

صنعاء : یمنی وزیر اطلاعات نے اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی برائے یمن مارٹن گریفتھس پر حوثیوں کی جانبداری کا الزام عائد کردیا۔

تفصیلات کے مطابق یمن کے وزیر اطلاعات معمر الاریانی نے اقوام متحدہ کے نمائندہ خصوصی برائے یمن مارٹن گریفتھس پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ اقوام متحدہ کے خصوصی ایلیچی ایرانی حمایت یافتہ حوثیوں کے دباؤ میں آکر بیان دے رہے ہیں۔

معمر الاریانی کا کہنا ہے کہ یمن کی صورتحال سے متعلق خصوصی بیان جانبداری کا مظاہرہ کررہی ہے، یو این ایلیچی کے بیان سے واضح ہوتا ہے کہ وہ حوثی جنگجوؤں کے خلاف کارروائی کرنے میں سنجیدہ نہیں ہیں۔

یمنی وزیر اطلاعات نے کہا تھا کہ انسانی حقوق کے عالمی ادارے کے سربراہ مارک لوک کا موجودہ بیان ماضی میں دئیے گئے بیانات سے مترادف ہے جس میں انہوں نے یمن میں غذائی قلت کا ذمہ دار حوثیوں کو ٹہرایا تھا۔

وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ ایرانی سرپرستی میں کام کرنے والی حوثی ملیشیا الحدیدہ سے متعلق اسٹاک ہوم معاہدے پر عمل درآمد کی راہ گزشتہ دو ماہ سے حائل ہے، حوثی بارہا بندر گاہوں کو دھماکے سے اڑانے کی دھمکیاں دیتے رہے ہیں۔

خیال رہے کہ نمائندہ خصوصی برائے یمن مارٹن گریفتھس نے کہا تھا کہ حوثی ملیشیا بندر گاہوں پر اتاری گئی گندم بحفاظت فلور ملوں تک پہنچا رہے ہیں جبکہ مارک لوک نے کہا تھا کہ حوثیوں نے حکومت کے زیر نگرانی فلور ملوں تک جانے والی گندم اپنے زیر کنٹرول فرنٹ لائن پر سیکیورٹی خدشات کی بناء پر روکی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں