The news is by your side.

Advertisement

اگر میں وزیر اعظم ہوتا تو قومی اسمبلی میں سعودی ولی عہد کا خطاب کرواتا، یوسف رضا گیلانی

لاہور : سابق وزیر اعظم  یوسف رضا گیلانی کاکہناہےکہ جوائنٹ سیشن بلواکرمحمدبن سلمان سےخطاب کرواناچاہیےتھا، اگر میں وزیر اعظم ہوتا تو قومی اسمبلی میں سعودی ولی عہد کا خطاب بھی کرواتا، سعودی ولی عہد سے پاکستانی قیدیوں،ویزافیس اور دیگرمسائل پربات ہوئی ، اس اقدام کوسراہتاہوں۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی نے احتساب عدالت میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا سعودی ولی عہد کو خوش آمدید کہتا ہوں، اس موقع پر اپوزیشن کو بھی مدعو کرنا چاہیے تھا اور سعودی ولی عہد سے ملنے کا موقع دیا جانا چاہیے تھا، تاکہ ہم بھی تو انہیں خوش آمدید کہتے۔

یوسف رضا گیلانی کا کہنا تھا کہ اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کے ساتھ سعودی ولی عہد کی ملاقات کروانی چاہیے تھی اور شہباز شریف صاحب کا خطاب بھی کروانا چاہیے تھا، جب میں وزیر اعظم تھا تو چائینہ کے صدر پاکستان آئے تو میں نے فلور آف دی ہاؤس سب کو خطاب کا موقع دیا تھا۔

پاکستانیوں کےمسائل پربات کوسراہتاہوں

یوسف رضاگیلانی

انھوں نے کہا اگر میں وزیر اعظم ہوتا تو قومی اسمبلی میں سعودی ولی عہد کا خطاب بھی کرواتا ، سعودی ولی عہد کی آمد پر بہت خوش ہوں ، ہمارے سعودی عرب سے بہت اچھے تعلقات ہیں۔

سابق وزیراعظم نے کہا جب ہماری حکومت تھی ہم نے اپوزیشن سے غیر ملکی مہمانوں کو نہ صرف ملوایا بلکہ وہ ان کے گھروں میں بھی گئے۔

یوسف رضا گیلانی کا مزید کہنا تھا کہ عمران خان کوآدھی قوم کونہیں بھولناچاہیےتھا، سعودی ولی عہد سے پاکستانی قیدیوں،ویزافیس اور دیگرمسائل پربات ہوئی ، اس اقدام کوسراہتاہوں۔

یاد رہے حکومت نے سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کے اعزاز میں عشائیے میں اپوزیشن رہنماؤں کو مدعو نہ کرنے کا فیصلہ کیا تھا، ذرائع کا کہنا تھا کہ اپوزیشن رہنماؤں کے خلاف مقدمات کےباعث انہیں مدعونہیں کیاگیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں