ینگ ڈاکٹرز نے غفلت چھپانے کے لیے ڈیتھ سرٹیفیکٹ میں ہیر پھیر کردی young-doctors
The news is by your side.

Advertisement

ینگ ڈاکٹرز، غفلت چھپانے کے لیے ڈیتھ سرٹیفیکٹ میں رد وبدل کردیا

لاہور: سروسز اسپتال میں ینگ ڈاکٹرز کی ہڑتال کے باعث طبی امداد نہ ملنے کی وجہ سے مریض جاں بحق ہوگیا۔

تفصیلات کے مطابق لاہور کے رہائشی محمدوارث کو حالت بگڑنے پر سروسزاسپتال کی ایمرجنسی میں لایاگیا تھا جہاں ینگ ڈاکٹرز کی ہڑتال جاری تھی جس کے باعث مریض کو فوری طبی امداد نہیں دی جا سکی اور ایمرجنسی کے باہر زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے موت کی بازی ہار گیا۔

ڈاکٹروں کی غفلت کا بھانڈا سی سی ٹی وی نے پھوڑ دیا by arynews

دوسری جانب ینگ ڈاکٹرز نے واقعے کی سنگینی کا اندازہ کرتے ہوئے مریض کے ڈیتھ سرٹیفیکٹ میں اپنی کوتاہی کو چھپانے کے لیے تحریر کردیا کہ مریض کو مردہ حالت میں اسپتال لایا گیا تھا۔

تاہم اہل خانہ کے احتجاج پر معاملہ اعلیٰ حکام تک پہنچا اور ایمرجنسی کے باہر لگے سی سی ٹی وی کمیروں کی فوٹیجز نکلوائی گئیں تو ینگ ڈاکٹرز کا تضاد سامنے آیا گیا جس میں دیکھا جاسکتا ہے کہ مریض کو زندہ حالت میں اسکوٹر پر لایا گیا تھا جب کہ ڈیتھ سرٹیفیکٹ میں لکھا گیا کہ مریض کو مردہ حالت میں لایا گیا تھا۔

محکمہ صحت نے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے ڈیتھ سرٹیفکیٹ اور فوٹیج میں تضادپرانکوائری کمیٹی قائم کردی جو اپنی تفصیلی رپورٹ سات دن کے اندر پرنسپل سمز کو جمع کرائے گی جس پر محکمہ صحت پرنسپل سمز کی سفارشات کے تحت تادیبی کارروائی عمل میں لائے گی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں