The news is by your side.

Advertisement

جعلی مقابلے میں شہری ہلاکت کیس، 4 پولیس افسران واہلکاروں کو عمرقید

ایڈیشنل اینڈ سیشن جج دیپالپور نے اوکاڑہ میں جعلی پولیس مقابلے میں شہری کی ہلاکت کیس میں 4 پولیس افسران واہلکاروں کو عمرقید کی سزا سنادی۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق ایڈیشنل اینڈ سیشن جج دیپالپور نے اوکاڑہ میں پولیس مقابلے میں شہری کی ہلاکت کیس کی سماعت کی۔

عدالت نے جرم ثابت ہونے پر 4 پولیس افسران واہلکاروں کو عمر قید کی سزا سنائی جب کہ دو اہلکاروں کو بردی کردیا۔

عدالت نے جن پولیس افسران واہلکاروں کو عمرقید کی سزا سنائی ان میں سابق ایس ایچ او نواب علی، اے ایس آئی محمد علی، کانسٹیبل ملک مقصود اور ملک الطاف شامل ہیں۔

عدالت نے  اسی مقدمے میں کانسٹیبل راؤ اوصاف اور راؤ فاروق کو بری کردیا۔

عدالتی فیصلے کے بعد پولیس نے عدالت میں موجود تمام سزا یافتہ مجرمان کو گرفتار کرلیا، مذکورہ افسران اور اہلکاروں نے 2015 میں ایک بیگناہ شہری کومقابلےمیں قتل کردیاتھا۔

واضح رہے کہ اس سے قبل بھی ملک کے مختلف شہروں میں جعلی پولیس مقابلوں میں کئی بیگناہ شہری اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں۔

مزید پڑھیں: کراچی: جعلی پولیس مقابلے میں 3 افراد کی ہلاکت، ایس ایچ او گرفتار

گزشتہ ماہ دسمبر میں کراچی کے علاقے بنارس میں ہونیوالا مقابلہ بھی جعلی نکلا تھا جس میں پولیس نے مقابلے کے نام پر تین بے گناہ مار ڈالے تھے۔

مذکورہ مقابلہ جعلی ثابت ہونے پر ایس ایچ او سمیت پوری پولیس پارٹی کو گرفتار کرلیا گیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں