The news is by your side.

Advertisement

بھارتی کوچ اورکپتان اختلاف کا شکارہیں، پاکستان فائدہ اُٹھا سکتا ہے، یونس خان

کراچی : سابق اسٹارکرکٹر یونس خان نے کہا ہے کہ آج کے میچ میں پاکستان پر دباؤ کم اوربھارت پرزیادہ ہوگا کیوں کہ بھارتی ٹیم اپنے ہیڈ کوچ اور کپتان کی آپسی رنجش اور اختلاف کے باعث دباؤ کا شکار ہوگی۔

وہ اے آر وائی نیوز پر آج ہونے والے پاک بھارت میچ پر تبصرہ دے رہے تھے انہوں نے کہا کہ پاکستان کو صرف جیت کےلئے کھیلنا ہوگا اور اگرکھلاڑی مثبت سوچ کے ساتھ میدان میں اتریں گے تواچھا کھیل ہوگا اور جیت کے امکانات بھی اتنے ہی روشن ہوں گے۔

سابق کپتان یونس خان کا کہنا تھا کہ سرفرازکی پریس کانفرنس بہت مثبت تھی جس کی حوصلہ افزائی کرتا ہوں امید ہے میدان میں بھی وہ اسی طرح کا اعتماد کا مظاہرہ کریں گے اور ٹیم کی جیت میں کلیدی کردار ادا کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ بھارت کی بیٹنگ لائن بہت مضبوط ہے جس کے لیے محمدعامرپرانحصارکرنا ہوگا کیونکہ وہاں بال سیم اورسوئنگ ہوتا ہے تاہم اگر جنید خان کو بھی ٹیم میں لیا جاتا تو بولنگ اٹیک اور مضبوط ہوجاتا ہے۔


*سیاست میں‌ ہوتا تو پی ٹی آئی جوائن کرتا، یونس خان


جنید خان سے متعلق پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ اگر میں کپتان ہوتا تو جنید خان کو ضرور ٹیم میں شامل کرتا تاہم اب ٹیم بن چکی ہے اس لیے کھلے مائنڈ اور مثبت سوچ کے ساتھ مقابلے کا آغاز کرنا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کی بیٹنگ لائن اگر پورے 50 اوورز کھیلے تو 300 سے 350 رنز بآسانی بن سکتے ہیں اچھی بات یہ ہے کہ اظہرعلی اچھی فارم میں ہیں اورہمارے پاس محمد حفیظ و شعیب ملک جیسے تجربہ کار، احمد شہزاد جیسا جارحانہ بلے باز اور بابراعظم جیسا پُراعتماد بلے باز موجود ہے۔

یونس خان نے کہا کہ حسن علی کی بولنگ اور بیٹنگ دونوں شعبےمیں پرفارم کررہے ہیں ہمارے پاس ایک جیسےاسٹائل کے کھلاڑی ہیں اس لیے ہمیں میچ کی صورت حال کےمطابق بیٹنگ آرڈرمیں ردوبدل کرنا ہوگا۔

خیال رہے کہ چیمپئنز ٹرافی 2017 میں آج برمنگھم میں پاکستان اپنے روایتی حریف بھارت کے مدمقابل ہوگی جس کے لیے دونوں ٹیمیں پر عزم ہیں اور اگر بارش نے مداخلت نہ کی تو شائقینِ کرکٹ کو کانٹے دار مقابلہ دیکھنے کو ملے گا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں