The news is by your side.

Advertisement

پاناما کیس: پیپلزپارٹی جے آئی ٹی اور عدالت میں فریق نہیں، یوسف رضا گیلانی

لوئر دیر: سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی نے کہا ہے کہ پیپلزپارٹی نے ہمیشہ آئین و قانون کی بقاء کے لیے جدوجہد کی اس لیے ہم پاناما کیس میں جے آئی ٹی اورعدالت میں فریق نہیں بن رہے۔

لوئر دیر میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاک فوج کے جوانوں نے آپ کے اچھے مستقبل کے لیے اپنا آج قربان کیا،مالاکنڈ ڈویژن کے لوگوں نے 25 لاکھ آئی ڈی پیز کی مدد کی یہی وجہ ہے کہ اتنی بڑی تعداد میں نقل مکانی کرنے والوں کی اپنے علاقوں میں واپسی تاریخ کا حصہ بن گئی۔

انہوں نے کہا کہ پیپلزپارٹی کی حکومت نے  آئین کے مطابق چھوٹے صوبوں کو اُن کے حقوق دئیے اور اُن کی احساس محرومی کو ختم کیا، خیبرپختونخواہ کو شناخت اور فاٹا میں گورنر شپ کا آنا بھی پی پی کا ہی کارنامہ تھا۔

یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ عدالت نے مجھے پانچ سال کے لیے نااہل قرار دیا تو ہم نے فیصلہ قبول کیا کیونکہ ملک کا آئین ذوالفقار علی بھٹو نے تشکیل دیا، ہم چاہتے تو فیصلے پر مزاحمت کرتے مگر ملکی بقاء اور اداروں کی مضبوطی پیپلزپارٹی کی ہمیشہ سے ہی اولین ترجیح رہی ہے۔

سابق وزیراعظم نے کہا کہ پیپلزپارٹی کو ختم کرنے کا سوچنے والے احمقوں کی جنت میں رہتے ہیں، عوام جانتے ہیں کہ کسانوں ، مزدوروں اور خواتین کے لیے جدوجہد کرنے والی جماعت صرف پیپلزپارٹی ہی ہے۔

یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ پیپلزپارٹی نے پختونوں کو شناخت دی اور ہماری ہی حکومت میں این ایف سی ایوارڈ بھی دیا گیا، موجودہ حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ فاٹا کو کے پی کے ضم کریں اور پختونوں کے شناختی کارڈز ان بلاک کیے جائیں ۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں