site
stats
پاکستان

حسین حقانی کو ویزے اجرا کی مشروط اجازت دی، یوسف رضا گیلانی

ملتان: پیپلزپارٹی کے رہنما یوسف رضا گیلانی نے حسین حقانی کے معاملے پر خاموشی توڑتے ہوئے کہا ہے کہ ملکی سربراہ کو آئین اور قانون کی پابندی کے مطابق ویزے جاری کرنے کا اختیار حاصل ہے، سابق سفیر کو ویزے اجرا کے لیے مشروط اختیارات دیے گئے تھے۔

ملتان میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے سابق وزیراعظم نے کہا کہ حسین حقانی کے آرٹیکل کو بلاوجہ مسئلہ بنایا جارہا ہے، سابق سفیر نے بیان دیا کہ ایبٹ آباد آپریشن میں حصہ لینے والے امریکی فوجیوں کو کلیئرنس کے بعد ویزے جاری کیے گئے مگر یہ بات غلط ہے کیونکہ آپریشن میں حصہ لینے والے اہلکار بغیر ویزے پاکستان میں داخل ہوئے۔

letter1

انہوں نے کہا کہ ویزے جاری کرنے کا اختیار وزیراعظم کو ہوتا ہے تاہم حسین حقانی کو خصوصی اختیارات مشروت اجازت پر دئیے گئے تھے، سفیر کو اختیارات دینے کا مقصد یہ نہیں تھا کہ وہ قانونی تفاضوں کو نظر انداز کردے، عملے اور ایجنسیز کو نظر انداز کر کے کسی کو ویزے جاری نہیں کیے جاسکتے۔

letter2

مزید پڑھیں: پیپلز پارٹی کی حکومت نے دفتر خارجہ کی ہدایت کو نظر انداز کیا

یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ امریکی اسپیشل فوسز کو ویزے جاری کرنے کا اختیار نہیں تاہم عام امریکیوں کو ضابطے کے تحت ویزے جاری کرنے کی ہدایت کی تھی، امریکا کو شمس ائیربیس استعمال کرنے کی جازت مشرف نے دی اور اس معاملے پر جوڈیشل کمیشن بھی بنایا گیا تھا، حسین حقانی خود بھی پیش ہوئے اگر اُس کی رپورٹ منظر عام پر لائی جاتی تو ایسے سوالات نہیں اٹھائے جاتے۔

paper

سابق وزیراعظم نے کہا کہ وزیراعظم اختیارات کو قانون کے دائرے میں رہ کر استعمال کرتا ہے، بطور وزیراعظم کسی قانون کی خلاف ورزی نہیں کی تاہم اگر کوئی خط تحریر کیا تو وہ بھی قانون کے مطابق ہی تھا، یہ ممکن نہیں کہ ویزے قانون کے برعکس جاری کیے گئے ہوں۔ یوسف رضا گیلانی نے مزید کہا کہ حکومت اس خوف میں ہے کہ پی پی دوبارہ اقتدار میں نہ آجائے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top