The news is by your side.

Advertisement

سانحہ بلدیہ کا ایک اور کردار ، یوسف گدھا گاڑی کے انکشافات

کراچی: بلدیہ فیکٹری میں آگ کس نے لگائی، کس کو ترقی ملی، کون تین روز تک امدادی کیمپ لگا کر لاشیں نکالتا رہا، اے آر وائے نیوز نے ایسٹ زون پولیس کے ہاتھوں گرفتار ہائی پروفائل ٹارگٹ کلر یوسف عرف گدھا گاڑی کا ویڈیو بیان اور انٹیرو گیشن رپورٹ حاصل کرلی۔

ایسٹ زون پولیس کے ہاتھوں گرفتار ہائی پروفائل ٹارگٹ کلر یوسف گدھا گاڑی کے اہم انکشافات کے بعد سانحہ بلدیہ کا ایک اور کردار سامنے آگیا، یوسف عرف گدھا گاڑی بلدیہ سیکٹر کا سرگرم کارکن اور رحمان بھولا کا قریبی ساتھی تھا۔


اسی سے متعلق : سانحہ بلدیہ کا مرکزی ملزم عبدا لرحمان بھولا کراچی منتقل


دوران تفتیش یوسف گدھا گاڑی کا کہنا تھا کہ بلدیہ سانحہ کے بعد اصغر بیگ کو ہٹا کر رحمان بھولا کو سیکٹر انچارج بنا دیا تھا، انٹیروگیشن رپورٹ کے مطابق بلدیہ میں سب سے زیادہ ٹارگٹ کلنگ اور فسادات ٹارگٹ کلنگ ٹیم لیڈر سیکٹر انچارج بلدیہ اصغر بیگ کے حکم پر ہوئی جبکہ اصغر بیگ آگ لگانے میں بھی ملوث تھا۔

یوسف گدھا گاڑی نے انکشاف کیا کہ رحمان بھولا نے فیکٹری میں آگ لگنے کے بعد 3 دن تک امدادی کیمپ لگایا جس میں بلدیہ سیکٹر کے دیگر ساتھیوں کے ساتھ فیکٹری سے لاشیں نکالتا رہا، یوسف گدھا گاڑی کے مطابق سیکٹر انچارج اصغر بیگ کی پوری فیملی بلدیہ فیکٹری میں کام کرتی تھی،اصغر بیگ کا بھائی اشرف بیگ فیکٹری میں مینجر تھا اور بھانجا یاسر بیگ بھی فیکٹری میں کام کرتا تھا، فیکٹری کی اندر کی معلومات اصغر بیگ کی فیملی کے ذریعے ہی باہر آتی تھیں۔

یوسف گدھا گاڑی نے دوران تفتیش رحمان بھولا اور ساتھیوں کے ہمراہ 16 قتل کی وارداتیں کرنے کا بھی اعتراف کیا، یوسف گدھا گاڑی کے مطابق عزیر بلوچ کے قریبی ساتھی شاہجہاں بلوچ کو قتل کیا جس پر عزیر بلوچ نے پریس کانفرنس بھی کی تھی ۔

جب کہ رشید آباد میں بھی یوسف گدھا گاڑی نے بلدیہ سیکٹر کے انچارج اصغر بیگ کے حکم پر 2010 میں اے این پی کے 5 کارکنان کو قتل کیا، جس پراصغر بیگ خوش ہوا اور شاباشی دی، ترک مارکیٹ میں رحمان بھولا اور ساتھیوں کے ساتھ مل کر 2 بھائیوں کو قتل کیا تھا۔

واضح رہے کہ یوسف عرف گدھا گاڑی کے انکشافات سے چند باتیں ہی سامنے آسکی ہیں تاہم اصل ماجرا رحمان بھولا کے بیان کے بعد سامنے آئے گا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں