The news is by your side.

Advertisement

میری بچی کے قاتل کو زندہ گرفتار کیا جائے، زینب کے والد کا مطالبہ

قصور : زینب کے والد نے مطالبہ کیا ہے کہ ملزم کو زندہ گرفتار کیا جائے، پولیس نےیقین دہانی کرائی ہےملزم تک جلدپہنچ جائیں گے۔

تفصیلات کے مطابق زینب کے قتل کو چار روز گزر گئے لیکن قاتل کا سراغ نہ ملا، قصور کے زینب کے والد محمد امین نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ قاتل کی گرفتاری کی کوئی مصدقہ خبر نہیں آئی ، پولیس نےیقین دہانی کرائی ہے ملزم تک جلدپہنچ جائیں گے۔

محمدامین کا کہنا تھا کہ وزیراعلیٰ نےجووعدہ کیاتھا اس سے 4گنا زیادہ وقت گزر چکا ہے، ملزم کو زندہ گرفتار کیا جائے، میڈیا سے معلوم ہورہا ہے، کیس میں پیشرفت ہورہی ہے۔

زینب کے والد نے کہا کہ پنجاب حکومت کی بنائی گئی جےآئی ٹی سےکل ملاقات ہوئی، ہمیں یقین دہانی کرائی گئی کہ جلدکیس میں پیشرفت ہوگی، وزیراعلیٰ پنجاب نے جو وقت دیا تھا وہ ختم ہوگیا ہے۔

گذشتہ روز زینب کے والد کا کہنا تھا کہ زینب کے قاتل کو گرفتار کرکے سرعام سزا دینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ بیٹی کےقاتل کی گرفتاری تک پر امن احتجاج جاری رہےگا،  بیٹی کا اغوا اور قتل انتظامیہ کی مکمل ناکامی ہے، پولیس میں انسانیت مرگئی،،پہلے ایسی پھرتیاں دکھاتے تو یہ نوبت ہی نہ آتی۔


مزید پڑھیں : زینب کے قاتل کو گرفتار کرکے سرعام سزا دی جائے، والد کا مطالبہ


اس سے قبل محمد امین کا کہنا تھا کہ ایسےواقعات ہونےسےقصورمیں خوف ہے، زینب کو ڈھونڈنے کیلئے پورا محلہ ساری رات جاگتا رہا، شہبازشریف گزشتہ رات 4 بجے مجھ سے ملنےآئے، شہبازشریف کےساتھ 2وزیربھی آئےتھے، شہبازشریف نے کہا آپ کوانصاف ملےگا، شہبازشریف نے کہا قاتل کو گرفتار کرکے سزا دیں گے۔

انھوں نے مزید کہا تھا کہ جب تک انصاف نہیں ملتاپنجاب حکومت پراعتمادنہیں ہے، غیرجانبدارانہ جےآئی ٹی تشکیل دینےکامطالبہ کیاہے، میری بیٹی کے قاتل کو انسان کہنا بھی انسانیت کی توہین ہے، میری بیٹی کتنا روتی اور چیخ رہی ہوگی۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پرشیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں