زینب کیس: ملزم عمران کے خلاف آئندہ ٹرائل جیل میں ہوں گے -
The news is by your side.

Advertisement

زینب کیس: ملزم عمران کے خلاف آئندہ ٹرائل جیل میں ہوں گے

لاہور: انسدادِ دہشت گردی عدالت نے زینب سمیت آٹھ کمسن بچیوں سے زیادتی اور قتل کے ملزم عمران علی کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھجوا دیا گیا‘ عدالت نے سرکاری وکیل کی استدعا پر مقدمہ جیل میں چلانے کا حکم دے دیا ۔

تفصیالت کے مطابق انسدادِ دہشت گردی کی خصوصی عدالت میں قصور میں 8 بچیوں کے قتل کے ملزم عمران کو دو دن کے ریمانڈ کے بعد سخت سیکیورٹی میں پیش کیا گیا ۔ پراسکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ ملزم کے خلاف تفتیش مکمل کر لی گئی ہے ۔

عدالت نے استفسار کیا کہ ملزم سے تفتیش کے دوران کیا شواہد اکٹھے کیے گئے۔ عدالت کو بتایا کہ ملزم کے خلاف مختلف نوعیت کے چھ شواہد اکٹھے کیے گئے۔جن میں سی سی ٹی وی فوٹیج‘ فوٹو پرنٹ ‘ پولی گراف ٹیسٹ ‘ ڈی این اے رپورٹ ‘ ملزم کے کپڑے اور میڈیکل ٹیسٹ شامل ہے۔

عدالت نے سرکاری وکیل سے استفسار کرتے ہوئے پوچھا کہ کیا ملزم نے اعتراف بیان ریکارڈ کروا دیا ہے ‘ جس پر عدالت کو بتایا گیا کہ ابھی ملزم نے اعتراف جرم نہیں کیا ۔ ملزم کی جانب سے مہر شکیل نے وکالت نامہ جمع کروایا جس پر عدالت نے انھیں روزانہ کی بنیاد پر سماعت کےلیے پیش ہونے کا پابند کرتے ہوئے کہا کہ چیف جسٹس ہائیکورٹ کے احکامات کے مطابق کیس کی سماعت روز کریں گے جبکہ سپریم کورٹ کی جانب سے بھی ہائی کورٹ کے احکامات پر عملدرآمد کا کہا گیا ہے ۔

سرکاری وکیل نے استدعا کی کہ سیکیورٹی خدشات کے پیش نظر کیس کی سماعت جیل میں ہی کی جائے ‘جسے عدالت نے منظورکرتے ہوئے ریمارکس دیے کہ یہ کیس انتہائی اہمیت کا حامل ہے ۔اس کے فیصلے پر سب کی نظریں لگی ہیں، سب چاہتے ہیں کہ فیصلہ جلد از جلد ہو۔

عدالت نے ملزم کے وکیل کو چالان کی کاپیاں فراہم کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے ملزم کو آٹھ کیسسز میں جوڈیشیل ریمانڈ پر جبکہ زینب کیس میں ٹرائل کا حکم دے دیا۔ مہر شکیل ایڈووکیٹ کا کہنا تھا کہ مقدمے میں محض جذباتی بیانات ہیں ‘کوئی ایسا ثبوت نہیں جس سے سزا ہو سکے ۔ امید ہے ملزم عمران بری ہو جائے گا ۔ ان کا کہنا تھا کہ شہباز شریف نے ملزم کے خلاف پریس کانفرنس کی مگر ملزم کو ان کی پریس کانفرنس پر نہیں بلکہ ثبوتوں اور شواہد پر سزاہونی ہے ۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات  کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں