The news is by your side.

Advertisement

ننھی زینب کاقصورکیاتھا، اللہ سے دعا ہے کسی کو بھی ایسی اذیت میں نہ ڈالے، والد زینب

قصور : معصوم بچی زینب کے والد کا کہنا ہے کہ ننھی زینب کا قصور کیا تھا، اللہ سے دعا ہے کسی کو بھی ایسی اذیت میں نہ ڈالے، ملزم پکڑنے کے لئے جو سرکاری طور پر کوششیں ہونی چاہئے تھی وہ نہیں ہوئی۔

تفصیلات کے مطابق قصور میں معصوم بچی زینب کے والد محمد امین نے اے آر وائی نیوز کے اینکر اقرار الحسن سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اللہ سے دعا ہے کسی کو بھی ایسی اذیت میں نہ ڈالے، ہماری مدد اور یکجہتی کرنیوالوں کاشکرگزارہیں، زینب معصوم بچی تھی کوئی انسان ایسا نہیں کرسکتا۔

محمد امین کا کہنا تھا کہ ملزم پکڑنےکے لئے جو سرکاری طورپرکوششیں ہونی چاہئے تھی وہ نہیں ہوئی، بچی کی گمشدگی کے بعد پولیس کوشش کرتی تو اغوا کاروں کو پکڑا جا سکتا تھا، ہمارا آج تک کسی کے ساتھ کوئی جھگڑا نہیں ہوا۔

اس سے قبل زینب کے والد نے کہا تھا کہ معصوم زینب کیلئےانصاف چاہتےہیں اورکوئی مطالبہ نہیں، ملزمان کوگرفتارکرکےعبرت کانشان بناناچاہیے، ملزمان کو ایسی سزا ملنی چاہیے تاکہ آئندہ کوئی ایسی جرات نہ کرسکے۔

انکا کہنا تھا کہ معلوم ہوا ہے، آرمی چیف اورچیف جسٹس نےنوٹس لیا ہے، اغوا کے بعد کی فوٹیج دیکھی تو زینب کو شناخت کرلیا تھا، انتظامیہ کو پتہ چل گیا تھا، بیٹی زینب اسی علاقے میں ہے، حکومت کی رٹ کہیں بھی نہیں، معلوم ہونے باوجود پولیس نے کوئی کارروائی نہیں کی۔

محمد امین نے کہا تھا کہ بچی کےساتھ بہت بڑاظلم ہوا، میری دعا ہے ایسا واقعہ کسی کی بیٹی کے ساتھ نہ ہو، معلوم ہونے باوجود پولیس نے کوئی کارروائی نہیں کی۔

یاد رہے کہ زینب کے والدین نے ایئرپورٹ پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ میری بچہ کےساتھ پیش آنےوالاواقعہ اندوہناک ہے، رشتےداروں نے بچی کو ڈھونڈنے کیلئے دن رات ایک کیا، پولیس نے ہمارے رشتےداروں سے تعاون نہیں کیا، سیکیورٹی جاتی امرا پر ہے ہم کیڑے مکوڑے ہیں۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر ضرور شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں