The news is by your side.

Advertisement

زرداری ،چوہدری برادران ملاقات، عدم اعتماد پر بات نہیں ہوئی،اندرونی کہانی

سابق صدر  آصف زرداری نے لاہور میں چوہدری برادران سے ملاقات کی جس میں سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال اور پرانی یادیں تازہ کی گئیں۔

اے  آر وائی نیوز ملاقات کی اندرونی کہانی سامنے لے آیا ملاقات میں حکومت مخالف تحریک یا عدم اعتماد کےحوالے سے کوئی بات نہیں ہوئی۔

آصف زرداری کی چوہدری برادران سے ملاقات دو گھنٹے جاری رہی اور ملاقات کے دو دور ہوئے۔

ملاقات کے پہلے سیشن میں چوہدری برادران،طارق بشیر،مونس،سالک حسین موجودتھے جب کہ آصف زرداری کیساتھ پولیٹیکل سیکرٹری رخسانہ بنگش ملاقات کاحصہ بنیں۔

دوسرےسیشن میں چوہدری برادران اورآصف زرداری کی الگ ملاقات ہوئی، ذرائع کے مطابق ملاقات میں سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا اور  مہنگائی کا مسئلہ بھی زیرغور آیا تاہم عدم اعتماد یا حکومت مخالف تحریک کے حوالے سے کوئی بات نہیں ہوئی۔

ذرائع کے مطابق اس ملاقات میں دونوں جانب سے پرانی یادیں تازہ کی گئیں جب دونوں اتحادی تھے۔

سابق صدر زرداری نے کہا کہ ہم جب اتحادی تھے تو پرویز الٰہی ڈپٹی وزیراعظم تھے اور ہم نے وہ وقت بڑا اچھا گزارا۔

اس موقع پر پرویز الٰہی نے کہا کہ ہمیں یادہےکہ آپ کے22اورہمارے17وزیرتھے، آپ بڑےدل والےہیں۔

چوہدری شجاعت نے زرداری کو یاد دلاتے ہوئے کہا کہ ایک مرتبہ میں آپ کے پاس گیا تھا تو آپ نے کہا تھا کہ بس اس سے زیادہ وزارتیں نہیں دے سکتا، اتنا اچھا تعلق تھا ہمارا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ہوسکتا ہے کہ زرداری صاحب چیک کرنا چاہتے ہوں اور جب انہوں نے ملاقات میں ایسا کوئی ماحول نہیں دیکھا تو حکومت مخالف تحریک یا عدم اعتماد کے حوالے سے کوئی بات ہی نہیں کی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ آصف زرداری اور چوہدری برادران کی آئندہ چند دنوں میں ایک اور  ملاقات ہوسکتی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں