The news is by your side.

Advertisement

صحافی ذیشان بٹ قتل کیس: ملزم کی عدم گرفتاری پر چیف جسٹس کا اظہار برہمی

لاہور: سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں صحافی ذیشان بٹ کے قتل سے معلق ازخود نوٹس کیس کی سماعت ہوئی، ملزم کی عدم گرفتاری پر چیف جسٹس نے سخت اظہار برہمی کیا اور ایک ہفتے میں رپورٹ طلب کرلی۔

تفصیلات کے مطابق لاہور رجسٹری میں صحافی ذیشان بٹ کے قتل سے متعلق ازخود نوٹس کیس کی سماعت ہوئی، عدالت نے مرکزی ملزم کو دبئی سے گرفتار کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے ایک ہفتے میں رپورٹ طلب کرلی ہے۔

دوران سماعت ڈی پی او سیالکوٹ نے بتایا کہ دبئی میں شریک ملزم ثاقب کی گرفتاری کے لیے ٹیم بھجوادی ہے، اطلاعات ہیں کہ ملزم ثاقب نے مرکزی ملزم عمران عرف عمرانی کو پناہ دی ہے، شریک ملزم ثاقب کی گرفتاری سے مرکزی ملزم تک پہنچا جائے گا۔

چیف جسٹس نے کہا کہ شریک ملزم کو بعد میں اور اصل ملزم کو پہلے گرفتار کریں، چیف جسٹس ثاقب نثار نے مرکزی ملزم کو دبئی سے گرفتار کرنے کی ہدایت دیتے ہوئے رپورٹ ایک ہفتے میں طلب کرلی، عدالت نے واقعہ میں گرفتار ملزمان کی درخواست ضمانت پر فیصلے رجسٹرار سپریم کورٹ کو بھجوانے کی ہدایت بھی کی۔

یاد رہے کہ صحافی ذیشان بٹ کو 27 مارچ کو سمبڑیال میں اس وقت قتل کیا گیا تھا جب وہ دکانداروں پرعائد کیے جانے والے ٹیکس کے حوالے سے معلومات لینے یونین کونسل بیگوالا کے دفتر پہنچنے تھے۔

ذیشان بٹ پر تین گولیاں فائر کی گئی تھیں جس کے بعد مرکزی ملزم یوسی چیئرمین عمران چیمہ موقع سے فرار ہوگیا تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں