The news is by your side.

Advertisement

بھارت: زوم ایپ سے ویڈیو کانفرنسنگ کے وقت ہوشیار رہنے کی وارننگ جاری

نئی دہلی: کرونا وائرس کی عالمگیر وبا کی وجہ سے لگنے والے لاک ڈاؤن میں زوم ایپ ویڈیو کانفرنسنگ سے مستفید ہوتے وقت ہوشیار رہنے کی وارننگ جاری کر دی گئی۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق پڑوسی ملک بھارت میں جاری ملک گیر لاک ڈاؤن کے دوران ویڈیو کانفرنسنگ کے زوم ایپ کے استعمال کے سلسلے میں ایڈوائزری جاری کی گئی ہے کہ اس ایپ کا استعمال غیر محفوظ ہے۔

بھارتی وزارت داخلہ نے کہا ہے کہ زوم ایپ کا ویڈیو کانفرنسنگ کے لیے استعمال محفوظ طریقے سے ہونا چاہیے، کیوں کہ اسے استعمال کرنے والے ہر وقت ہیکرز اور سائبر کریمنلز کے حملوں کے خطرے سے دوچار ہوتے ہیں۔

بتایا گیا ہے کہ اگرچہ زوم ایپ گھر سے کام کرنے کے سلسلے میں نہایت مفید ثابت ہوا ہے تاہم یہ اب تک ہیکرز کے لیے بھی بہت مددگار ثابت ہوا ہے، اس میں ایسی تکنیکی خامیاں موجود ہیں جن سے ہیکرز فائدہ اٹھا کر یوزرز کے سسٹم کو ہیک کرتے رہتے ہیں۔

لاک ڈاؤن میں ’زوم‘ ایپ استعمال کرنے والوں کے لیے چونکا دینے والی خبر

خیال رہے کئی ممالک اس ایپ کے سلسلے میں وارننگز جاری کر چکے ہیں، رواں ماہ کے آغاز میں امریکی سیکرٹ ٹیسٹنگ ایجنسی نے بھی زوم ایپ کے سلسلے میں وارننگ جاری کرتے ہوئے کہا تھا کہ اس کے استعمال میں احتیاط برتی جائے۔ گزشتہ برس دسمبر میں سنگاپور حکام نے بھی اساتذہ کو زوم ایپ استعمال نہ کرنے کی ہدایت کی تھی۔ بھارت کی نیشنل سائبر سیکورٹی ایجنسی نے بھی ایپ کی خامیوں سے لوگوں کو آگاہ کیا تھا۔

زوم ایپ کو سرکاری اور کاروباری مقاصد کے لیے استعمال نہ کرنے کا بھی پرزور مشورہ دیا گیا ہے، بھارتی وزارت داخلہ نے اس کے انفرادی استعمال کو بھی غیر محفوظ قرار دیا، اس کے محفوظ استعمال کے لیے ایک گائیڈ لائن بھی جاری کی گئی ہے جس پر عمل سے کسی بھی سائبر اٹیک کو روکا جا سکتا ہے۔

گائیڈ لائنز کے مطابق ہر ویڈیو میٹنگ کے وقت نیا آئی ڈی اور پاس ورڈ سیٹ کیا جائے، ہوسٹ کی منظوری کے بعد یوزر کو کانفرنس میں لیا جائے اور اس کے لیے ویٹنگ روم کا فیچر آن کیا جائے، جوائن بی فور ہوسٹ کا فیچر آف کر دیں، اسکرین شیئرنگ کا فیچر ہوسٹ اونلی رکھیں، ہٹائے جانے والے شرکا کو دوبارہ جوائن کرنے کا فیچر بھی آف کر دیں، ریکارڈنگ فیچر سے محتاط رہیں اور اسے محدود کر دیں، ایڈمنسٹریٹر میٹنگ کے خاتمے پر اسے ضرور بند کر کے جائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں