The news is by your side.

Advertisement

بھارت میں موتیا کا ناکام آپریشن، 14 افراد بصارت سے محروم

ممبئی: مغربی بھارت میں 14 افراد موتیے کے ناکام آپریشن کے سبب اپنی ایک آنکھ کی قوت بصارت سے ہاتھ دھوبیٹھے، طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ بھارت میں غیرمعیاری صحت کی سہولیات کی یہ تازہ مثال ہے۔

بھارتی ریاست مہاشترا کے حکام کا کہنا ہے کہ اس واقعے میں سراسرغفلت اسپتال کے عملے کی ہے جس نے آپریشن میں استعمال ہونے والے آلات کو صحیح طریقے سے جراثیم کش عمل سے نہیں گزارا جس کے سبب ایسا آپریشن جس میں نقصان کے اندیشے کم سے کم ہوتے ہیں اتنی کثیر تعداد میں لوگ بصارت سے ہاتھ دھوبیٹھے۔

اس موقع پر مہاراشترا کے وزیرصحت دیپک سوانت کا کہنا تھا کہ ’’اس معاملے میں ڈاکٹروں اور سرجنوں نے انتہائی غفلت کا مظاہرہ کیاہے‘‘۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ تین ڈاکٹروں اوراسٹاف کے کچھ ممبران کو معطل کیا گیا ہے اور واقعے کے اصل ذمہ دار کے تعین کے لئے اعلیٰ سطحی کمیٹی قائم کی جاچکی ہے۔

دوہفتے قبل ہونے والے ان ناکام آپریشنوں میں 23 افراد کی بصارت متاثر ہوئی تھی جن میں سے 4 کی بصارت بحال کی جاچکی ہے جبکہ 5 کی بصارت کی بحالی پر کام جاری ہے جبکہ 14 افراد کی بصارت مکمل طور پر ضائع ہوچکی ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ سال دسمبر میں بھی شمالی پنجاب کے ایک فری میڈیکل کیمپ میں ہونے والے آپریشنوں کے نتیجے میں 20 افراد اپنی بصارت سے ہاتھ دھوبیٹھے تھے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں