The news is by your side.

سیلابی پانی کو کنٹرول کرنے کے لئےنئے ڈیمز بنانا ہونگے، آرمی چیف

راولپنڈی: آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کا کہنا ہے کہ موسمیاتی تبدیلی میں ہماراحصہ ایک فیصد سے بھی کم ہے، دوسرے ممالک کی وجہ سےپاکستان کو اس کی قیمت چکانا پڑرہی ہے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ ( آئی ایس پی آر) کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے سندھ کے سیلاب زدہ علاقے دادو کا دورہ کیا اور ریلیف و میڈیکل کیمپوں میں متاثرین کے ساتھ وقت گزارا۔

پانچ ہزارخیمے فراہم کی ہدایت

آرمی چیف نے دادو ،خیر پور ناتھن ،جوہی ،میہڑاورمنچھر جھیل کاجائزہ لیا اور امدادی کاموں میں مصروف جوانوں سے بھی ملاقات کی۔

آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے فارمیشن کو دادو میں پانچ ہزارخیمے فراہم کی ہدایت کی اور خیموں کو نواحی علاقوں تک فوری فراہم کرنے کا بھی حکم دیا۔

پری فیب ویلج

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے آرمی چیف نے کہا کہ میرے ذہن میں ایک آئیڈیا آیا ہےکہ یہاں پری فیب ویلج بناتےہیں، یہاں پچاس یا سو گھروں پرمشتمل پری فیب ویلج بنائیں گے، جس کے لئے جگہ کاانتخاب کیاجارہاہے ان کی خوبی یہ ہےکہ وہ چند دن میں بن جاتےہیں، دو بیڈ روم اور ایک کچن کا گھر تقریباً پانچ لاکھ روپےمیں بن جاتاہے۔

سیلاب کی روک تھام کیلئےکام کرنا ہوں گے

آرمی چیف نے کہا کہ ہم دریا کےذریعے سیلاب آنےکیلئے ہمیں آئندہ تیارہونےکی ضرورت ہے، شہداکوٹ،لاڑکانہ سےآنےوالےسیلاب سے بڑی تباہی آئی، ہم نےدریاسےآنےوالےسیلاب کی روک تھام کیلئےکام کرناہوں گے، آرمی انجینئرزکو بھی ٹاسک دےدیاہےوہ بھی اس پرکام کررہےہیں اس کے علاوہ عالمی انجینئرزکوبھی دعوت دی ہےوہ بھی جلد پاکستان آرہےہیں۔

آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ کا کہنا تھا کہ پاکستان کےتمام سیلاب زدہ علاقوں کادورہ کیا، میرےخیال میں سب سےزیادہ تباہی منچھرجھیل اوراطراف میں ہوئی، دادواور اطراف کےعلاقوں میں ریسکیوکاکام اب بھی جاری ہے اور پہلا فیز چل رہا ہے، دادو میں ہم نےلوگوں کوریسکیوبھی کرناہےاورریلیف بھی دینا ہے۔

سیلاب متاثرین کی بحالی بڑاچیلنج قرار

آرمی چیف جنرل قمرجاویدباجوہ نے سیلاب متاثرین کی بحالی کو ایک بڑاچیلنج قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہمیں ہرچیز کیلئےعالمی کمیونٹی کو نہیں دیکھناچاہیے،اپنی مدد بھی کرنی چاہیے۔

امدادی کاموں میں مصروف جوانوں سے گفتگو میں آرمی چیف کا کہنا تھا کہ موسمیاتی تبدیلی میں ہمارا حصہ ایک فیصد سے بھی کم ہے، دوسرےممالک کی وجہ سےپاکستان کو اس کی قیمت چکانا پڑرہی ہے، سیاچن میں ہمارے گلیشیئرز بھی پگھل رہےہیں۔

موسمیاتی تبدیلی

آرمی چیف نے عالمی دنیا پر زور دیا کہ موسمیاتی تبدیلی سےمتعلق سب ممالک کو مل کرکام کرنےکی ضرورت ہے، اب آوازیں اٹھ رہی ہیں کہ موسمیاتی تبدیلی پرتوجہ نہ دی تو مسائل آسکتےہیں، گلوبل وارمنگ کامسئلہ ہرجگہ پرآرہاہے۔

پاک فوج کے سپہ سالار کا کہنا تھا کہ دنیا کو باورکرارہےہیں کہ ہمیں توانائی کےمتبادل ذرائع کی طرف جاناہوگا، ہائیڈرو کاربن،تیل اورکوئلےسےبجلی بنانےکےمتبادل ذرائع پرجاناہوگا۔

ڈیمزبناناہونگے

آرمی چیف نے کہا کہ سیلابی پانی کو کنٹرول کرنے کے لئے پاکستان میں مزید بڑےڈیمز بنانا پڑیں گے، ڈیمزبناناہونگےتاکہ پانی کو کنٹرول کرکےبجلی بناسکیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں