site
stats
عالمی خبریں

کرپشن کے الزام میں گرفتار شہزادہ متعب بن عبد اللہ کورہا کردیا گیا

ریاض: سعودی عرب کے زیر حراست شہزادے متعب بن عبد اللہ کو رہا کر دیا گیا، شہزادہ متعب کوایک ارب ڈالر واپس کرنے کی ڈیل پررہائی ملی۔

غیر ملکی خبر ایجنسی کے مطابق تین ہفتے قبل سعودی عرب میں بد عنوانی کے خلاف شروع کی جانے والی مہم میں گرفتار شہزادے متعب بن عبداللہ نے رہائی کے بدلے سعودی حکام کو ایک ارب ڈالر ادا کرنے پر رضا مندی ظاہر کر دی۔

جس کے بعد انہیں ضروری کارروائی کے بعد رہا کر دیا گیا ۔

سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کی زیر قیادت کام کرنے والی انسداد بدعنوانی کمیٹی کے اندازے کے مطابق سعودی عرب میں کئی برسوں کے دوران ایک کھرب ڈالر کی کرپشن کی گئی ہے۔


مزید پڑھیں : سعودی عرب میں کرپشن کےالزام میں 11 شہزادے اور4 وزیرگرفتار


خیال رہے کہ شہزادہ متعب بن عبداللہ ولی عہد محمد بن سلمان کے کزن ہیں جبکہ شہزادہ متعب بن عبد اللہ کو کرپشن کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔

یاد رہے کہ رواں ماہ کے آٖغاز میں سعودی عرب میں نئی اینٹی کرپشن کمیٹی نے گیارہ شہزادوں، 4 موجودہ اورسابق وزرا کو کرپشن کے الزام میں گرفتار کیا تھا۔

حراست میں لیے جانے والے افراد میں سعودی عرب کے امیر ترین شہزادے الولید بن طلال بھی شامل تھے۔

سعودی فرما نروا شاہ سلمان کے جاری کردہ شاہی فرمان کے تحت نیشنل گاڑدز کے وزیر شہزادہ متعب بن عبداللہ کو ان کے عہدے سے ہٹاکر خالد بن عبدالعزیزکو نیشنل گارڈز کا نیا وزیرمقررکردیا گیا تھا۔


مزید پڑھیں :  سعودی عرب میں ایک کھرب ڈالرکی کرپشن کا انکشاف


بعد ازاں سعودی اٹارنی جنرل شیخ سعود المجیب نے ملک میں حالیہ عشروں کے دوران ایک کھرب ڈالرز کی خوردبرد کا انکشاف کیا تھا ، جس پر انسدادبدعنوانی مہم میں201افراد کو حراست میں لیا تھا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پرشیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top