سائبیریا میں چالیس ہزارسال پرانے گھوڑے کی حنوط شدہ لاش دریافت
The news is by your side.

Advertisement

سائبیریا میں چالیس ہزارسال پرانے گھوڑے کی حنوط شدہ لاش دریافت

روس: سائبیریا کے برفیلی پہاڑوں سے ایک گھوڑے کی حنوط شدہ لاش ملی ہے، جس نے سائنس دانوں کی توجہ حاصل کر لی ہے.

تفصیلات کے مطابق روسی سائنس دان سائبیریا کے سرد اور دور افتادہ علاقے میں ایک تحقیقی پراجیکٹ پر کام کر رہے تھے، جب سو میٹر کھدائی کے بعد انھیں گھوڑے کے بچےکی لاش ملی.

یہ حنوط شدہ لاکھ کم و بیش چالیس ہزار سال پرانی ہے اور حیرت انگیز طور پر مکمل اور محفوظ شکل میں‌موجود ہے.

سائنس دانوں کا کہنا ہے کہ لاش مہارت سے حنوط کی گئی ہے، جس کے سبب اعضا آج بھی محفوظ ہیں۔ لاش کی حالت کا ایک سبب سائبیریا کی برف بھی ہے، جس نے اتنے عرصے اسے محفوظ رکھا.

مزید پڑھیں: زمین کے سب سے بڑے ڈائنو سار کا پاؤں دریافت

ماہرین کے مطابق لاش کی مدد سے زمانہ قدیم کے بارےمیں معلومات حاصل کی جاسکتی ہیں، ساتھ ہی یہ دریافت گھوڑوں کے ارتقائی سفر پر بھی روشنی ڈال سکتی ہے. ماہرین متفق ہیں‌کہ  اس گھوڑے کا تعلق آئس ایچ سے ہے.

یاد رہے کہ سائبیریا کا علاقہ پورے روس کا 66 فیصد ہے. یہ براعظم ایشیا میں واقع ہے اور مغرب میں کوہ اورال سے مشرق میں بحر الکاہل کے ساحلوں تک پھیلا ہوا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں