The news is by your side.

Advertisement

جما عت اسلا می کے رہنما پروفیسر غفور کو دنیا سے رخصت ہو ئے ایک برس بیت گیا

سیاست شرافت و دیانت کا نمونہ ، پا نچ کتا بو ں کے مصنف، سابق رکن قومی اسمبلی،سینیٹر اور جما عت اسلا می کے رہنما پروفیسر غفور کو دنیا سے رخصت ہو ئے ایک برس بیت گیا

شرافت کا پیکر،دلائل کے اسلحے سے لیس ،بامروت، وضعدار،پا نچ کتا بو ں کے مصنف اور پا کستان کی سیا سی تاریخ کے اہم کردار پروفیسر غفور احمد انیس سو ستا ئیس میں با نس بریلی میں پیدا ہو نے والے غفور احمد نے لکھنؤ یونیورسٹی سے کامرس میں ماسٹرز کیا۔

انیس سو پچاس میں جماعت اسلامی سے وابستہ ہوئے اور تادم آخر اسی کا دامن تھامے رکھا، اس دوران انیس سو اٹھا ون میں کو نسلر،ستر اور ستتر میں رکن قو می اسمبلی نو ے کی دہا ئی میں سینیٹر منتخب ہو ئے۔

سیاست ان کا پیشہ نہیں اوڑھنا بچھونا تھا۔ پروفیسر غفور نےتہتر کے آئین کی تیاری میں اہم کردار اداکیا،قومی اتحاد اور آئی جے آئی کے جنرل سیکریٹری رہے لیکن ان کی ذات پر کبھی کو ئی معترض نہ رہا۔

غفور صاحب ان گنے چنے سیاستدانوں کی صف کے معدودے چند افراد میں شامل تھے جن کی اصول پسندی، آگہی، اخلاص، سادگی ، عوامیت اور قابلیت شک و شبہے سے بالا تھی پروفیسر غفور احمد محض اپنی جماعت کا ہی نہیں بلکہ ملک وقوم کا ایک قیمتی سرمایہ اور اثاثہ تھے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں