site
stats
پاکستان

دہشت گردی پوری دنیا کیلئے خطرہ ہے، راحیل شریف

راولپنڈی :آرمی چیف جنرل راحیل شریف کا کہنا ہے کہ دہشت گردوں کو کہیں بھی دوبارہ منظم ہونے کی اجازت نہیں دیں گے، افغانستان میں قیام امن کیلئے پاکستان اپنا بھرپور کردار ادا کرتا رہے گا، کوئی بھی پاکستان اور افغانستان کو ایک دوسرے سے علیحدہ نہیں ہو کرسکتا۔

آئی ایس پی آر کی جانب سے جاری بیان کے مطابق آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے اٹلی میں سینٹر آف انٹرنیشنل اسٹڈی روم میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردوں کے خاتمے کیلئے آپریشن ضرب عضب شروع کیا گیا جس کے حوصلہ افزاء نتائج ملے ہیں،دہشت گردوں کے چند باقی رہ جانے والے ٹھکانے کلیئر کرائے جا رہے ہیں، دہشت گردوں کو کہیں بھی دوبارہ منظم نہیں ہونے دیا جائے گا، پاکستان بیرون دنیا میں بھی امن کو یقینی بنائے گا۔

آرمی چیف کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان اور افغانستان ایک دوسرے سے علیحدہ نہیں رہ سکتے، دونوں ممالک کا امن و استحکام ایک دوسرے سے منسلک ہے، پاکستان اور افغانستان کی منزل ایک ہے۔ آرمی چیف کی جانب سے ایک بار پھر اس عزم کا اعادہ کیا گیا کہ پاکستان اور خطے کو دہشت گردی سے ہر صورت پاک کریں گے۔

جنرل راحیل نے کا کہنا تھا کہ پاکستان افغانستان میں قیام امن کیلئے کردار ادا کرتا رہے گا اور پڑوسی ملک میں امن کیلئے پر امید ہیں، عالمی برادری بھی افغان امن عمل میں پاکستانی کردار کو سراہتی ہے جب کہ پائیدار امن کے لئے مشترکا کوششوں کی ضرورت ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ دہشت گردی پوری دنیا کیلئے خطرہ ہے، دہشت گردی کے خلاف جنگ کو منطقی انجام تک پہنچانے کیلئے سب مل کر کام کریں اور اس کیلئے پاک فوج دشمنوں کے ناپاک عزائم کو شکست دینے کیلئے پرعزم ہیں۔

 

اس موقع پر خطاب کے دوران آرمی چیف نے بین الاقوامی سلامتی سے متعلق پاکستان کا نقطہ نظر پیش کیا، حاضرین نے آرمی چیف کے خطاب کو سراہا اور مؤقف تسلیم کیا۔

آرمی چیف کا کہنا تھا کہ مصالحتی کوششوں کو دنیا کی انٹیلی جنس کمیونٹی تسلیم کرتی ہے، تاہم پائیدار امن کیلئے مشترکا کوششوں کی ضرورت ہے،عالمی برادری قیام امن کیلئے پاکستان کی کوششوں کو تسلیم کرے، دہشت گردی کے خلاف جنگ دنیا کیلئے ایک کشمکش پاکستان کیلئے بقا کی جنگ ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top