site
stats
اہم ترین

سابق قائم مقام چیف جسٹس رانابھگوان داس انتقال کرگئے

کراچی : پاکستان کی تاریخ کے پہلے ہندو قائم مقام چیف جسٹس رانا بھگوان داس تہتر سال کی عمر میں کراچی میں انتقال کرگئے، ان کا کریاکرم کراچی میں کیا جائے گا۔

صوبہ سندھ سے تعلق رکھنے والے رانا بھگوان داس انیس سوبیا لیس میں نصیرآباد ضلع قمبر شہداد کوٹ میں پیدا ہوئے، انیس سو پینسٹھ میں بطور وکیل اپنی پیشہ ورانہ زندگی کا آغازکیا۔

انیس سوسڑسٹھ میں سول جج کی حیثیت سے ملازمت کا آغاز کیا، سیشن جج بنے، انیس سو چورانوے میں سندھ ہائیکورٹ میں جج تعینات ہوئے، جہاں سن دو ہزار تک فرائض انجا م دیتے رہے۔

سن دوہزار میں سپریم کورٹ میں تعیناتی ہوئی، نوما رچ دو ہزار سات کو جب جنرل مشرف نے اس وقت کے چیف جسٹس افتخار چوہدری کوغیر فعال کیا تو رانابھگوان داس نے قائم مقام چیف جسٹس کا منصب سنبھالا۔

وہ پہلے ہندواور تیسرے اقلیتی جج تھے، جو سپریم کورٹ کے قائم مقام چیف جسٹس بنے، جسٹس رانا بھگوان داس کے دور میں جسٹس افتخار چوہدری کی بحالی ہوئی۔

 تین نو مبر دو ہزارسات میں جب جنرل مشرف نےاپنے دور کا دوسرا پی سی او جاری کیا تو جسٹس رانابھگوان داس نے حلف لینے سےانکار کردیا اور اسی سال دسمبر میں ریٹائر ہوگئے۔

نومبر دو ہزارنو میں انہیں فیڈرل پبلک سروس کمیشن کا سربراہ مقرر کیا گیا، اس عہدے پر وہ دسمبر دو ہزار بارہ تک فائز رہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top