The news is by your side.

Advertisement

سانحہ ملتان اتفاقیہ حادثہ تھا، تحقیقاتی رپورٹ

لاہور: سانحہ ملتان کی تین رکنی تحقیقاتی کمیٹی کی رپورٹ پنجاب حکومت کو موصول ہوگئی ہیں، تحقیقاتی رپورٹ کے مطابق یہ ایک اتفاقیہ حادثہ تھا ،جس میں تخریب کاری کا عنصر شامل نہیں۔

سانحہ ملتان کی تحقیقاتی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ اے ایس آئی محمد انور نے اسٹیج پر موجود شاہ محمود قریشی کو بھگدڑ کے واقعہ کی خود اطلاع دی، انہوں نے اس خبر سےاعجاز چوہدری اور عمران خان کو بھی آگاہ کیا۔

 رپورٹ کے مطابق عمران خان نے تقریر روک کر لوگوں کو مذکورہ گیٹ سے واپس آنے کی ہدایت کی،جس گیٹ پر یہ واقعہ پیش آیا وہ کھلا تھا اورلائٹ کا بھی انتظام تھا۔

ویڈیو رپورٹ کے مطابق امدادی کارروائیوں کیلئے مذکورہ گیٹ کو بند کر دیا گیا اور زخمیوں کو موقع پر ہی فوری طبی امدادفراہم کی گئی، پولیس اور ریسکیو ڈبل ون ڈبل ٹو موقع پر موجود تھی، بھگدڑ پر قابو پانے اور لوگوں کو پیچھے دھکیلنے کے لئے واٹر کینن سے پانی کا سپرے کیا گیا ۔

رپورٹ کے مطابق تحریکِ انصاف کی انتظامیہ نے ضلعی انتظامیہ سے طے پانے والے معاہدے کی شقوں پر مکمل عملدر آمد نہیں کیا، جلسہ گاہ کا مقام بڑے ہجوم کے لئے نامناسب تھا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں