عید توکیا ایک سال بھی بیٹھنا پڑا توبیٹھوں گا، عمران خان -
The news is by your side.

Advertisement

عید توکیا ایک سال بھی بیٹھنا پڑا توبیٹھوں گا، عمران خان

اسلام آباد: عمران خان نےکہا کہ اٹھارہ سال کی سیاست ایک طرف اورپینتیس دن کی خوشی ایک طرف، بے شک وزیراعظم نہ بنوں لیکن چاہتاہوں کسی پرظلم نہ ہو۔

اسلام آباد میں دھرنے کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کا کہنا تھا کہ موجودہ جمہوریت میں عوام کے پیسے کا کوئی حساب نہیں رکھا جاتا رائے ونڈ محلات پر خرچ ہونے والے پیسوں کا پوچھا تھا ابھی تک جواب نہیں آیا، نواز شریف کے امریکا کے چار دن کے دورے پر ساڑھے چار کروڑ خرچ ہوں گے، ان کا یہ بھی کہنا تھا اسمبلی میں بڑی گھٹیا تقریریں کی جارہی ہیں اسمبلی والوں کو ڈر ہے کہ کہیں عوام جاگ نہ جائے ۔

عمران خان نے کہا کہ جمہوری حکمران اپنے نفس کو نہیں عوام کو بچاتے ہیں۔ پارلیمنٹ کے جوائنٹ سیشن والے بتائیں دھرنے میں کون سی چیز غیر قانونی ہے۔ گلو بٹوں سے ڈرنے والے نہیں، وزیراعظم سے استعفیٰ لئے بغیر واپس نہیں جائیں گے۔ کپتان کہتے ہیں عوام اپنے حقوق کیلئے کھڑے ہو رہے ہیں، عدالت کے فیصلے کے باوجود کنٹینرز نہیں ہٹائے گئے کس قانون کے تحت کنٹینرز لگائے اور اسکول بند کیے ہوئے ہیں اگر دھرنے میں کوئی خطرہ ہوتا تو کیا یہاں خواتین ، بچے آتے جو جتنا ہمیں برا بھلا کہتا ہے وہ اتنا ہی بڑا ڈاکو ہے۔ مسلسل 35دن لوگ فوج کے کہنے پر باہر نہیں نکلا کرتے۔

تحریک انصاف نے اعلان کیا کہ آپ کا پیغام پورے پاکستان میں جا چکا ہے، میں سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں جہاں بھی گیا ایک ہی نعرہ سننے کو ملا وہ نعرہ ’گو نواز گو‘ تھا، میں نے فیصلہ کیا ہے کہ ا ب چاہے مجھے ایک سال بھی دھرنا دینا پڑے میں یہیں موجود ہوں، عید تو پہلے ہی یہاں گزارنے کا اعلان کر چکا ہوں، اس کی وجہ یہ ہے کہ ہمارے یہاں ہونے سے پاکستانی قوم اپنے حقوق سے آ گاہ ہو رہی ہے اور ان حقوق کو حاصل کرنے کے لئے بیدار ہو رہی ہے۔ مجھے زندگی میں کبھی اتنی خوشی نہیں ہوئی جتنی اس بیداری کو دیکھ کر ہو رہی ہے۔

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا قائداعظم اپنی ذات اور بادشاہ بننے کیلئے پاکستان نہیں بنا رہے تھے اسلیے لوگ قائداعظم کی عزت کرتے ہیں، نیلسن منڈیلا نے 27 سال جیل میں گزارے اور جیل کاٹنے کے بعد سب کو معاف کر کے جنوبی افریقہ کو خون سے بچایا، ان کا مزید کا کہنا تھا ہم نے فیصلہ کرنا ہے ظالموں کا ساتھ دینا ہے یا نیا پاکستان بنانا ہے اس وقت بجلی کی قیمت 80 فیصد بڑھا دی گئی، 70 فیصد ارکان اسمبلی ٹیکس نہیں دیتے۔ دنیا میں سب سے کم ٹیکس پاکستان میں اکٹھا کیا جاتا ہے ۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں