The news is by your side.

Advertisement

لاہور ہائی کورٹ: پھانسی پانے والے2 افراد کی سزا کیخلاف اپیل مسترد

لاہور: لاہور ہائی کورٹ نے سات افراد کے قتل میں پھانسی پانے والے دو افراد کی سزا کے خلاف اپیل مسترد کرتے ہوئے سزا بحال رکھی۔

ہائی کورٹ کے دو رکنی بنچ نے کیس کی سماعت کی، پھانسی کے سزا یافتہ ذوالفقار اور فدا کے وکیل نے دلائل دیئے کہ کمزور شہادتوں اور ناکافی ثبوتوں کے باوجود انسدادِ دہشت گردی عدالت نے پھانسی کی سزا سنائی، جو انصاف کے خلاف ہے، لہذا سزا کالعدم قرار دی جائے۔

سرکاری وکیل نے عدالت کو بتایا کہ دونوں افراد کے خلاف ٹھوس شواہد اور گواہیاں موجود ہیں، عدالت نے وکلاء کے دلائل مکمل ہونے کے بعد اپیل مسترد کردی۔

ذوالفقار، فدا اور عباد علی نے 2009 میں شیخوپورہ سے گوجرانوالہ زیورات لے جانے والے آٹھ افراد پر فائرنگ کرکے سات افراد یعقوب، اصغر، محمد رفیع اور امجد سمیت سات افراد کو قتل کردیا تھا۔

جس پر انسدادِ دہشت گردی عدالت نے 2010 میں تینوں مجرموں کو سات سات بار پھانسی کی سزا سنائی تھی، مقدمے کا ایک ملزم عباد علی پہلے ہی جیل میں انتقال کرچکا ہے۔

سانحہ پشاور کے بعد وزیرِاعظم نے پھانسی پر عائد پابندی ختم کردی تھی، جس کے بعد اب تک بائیس مجرموں کو تختہ دار پر لٹکا یا جا چکا ہے، پنجاب میں چودہ ، سندھ میں سات اور کے پی کے میں ایک دہشتگرد کو پھانسی دی گئی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں