The news is by your side.

Advertisement

مدارس، مساجد کے لئے ضابطۂ اخلاق جاری

اسلام آباد: پاکستان علماء کونسل نے مدارس اورمساجد کے لیے ضابطہ اخلاق جاری کردیا ہے۔

مولانا طاہر اشرفی کی زیر صدارت اجلاس میں ضابطہ اخلاق کی منظوری دی گئی۔


ضابطہٗ اخلاق میں کہا گیا کہ جمعہ کے عربی خطبہ اوراذان کے علاوہ لاﺅڈ سپیکر کا استعمال نہ کیا جائے۔

مدرسہ انتظامیہ زیر تعلیم طلباءاساتذہ ، معلمات اور ملازمین کے کوائف کا ریکارڈ رکھیں۔

کسی بھی غیر ملکی کو قانونی دستاویزات کے بغیر نہ رکھیں۔

ضابطہ اخلاف میں کہا گیا ہے کہ افغانی طلباءاور اساتذہ کے سلسلہ میں حکومت پاکستان کے جاری کردہ مہاجر کارڈ کو ہی قانونی دستاویز سمجھا جائے گا۔

رجسٹرڈ مدارس رجسٹریشن اورسالانہ آڈٹ رپورٹ اورغیر رجسٹرڈ مدارس جنہوں نے رجسٹریشن کے لیے درخواست دی ہوئی ہے وہ رجسٹریشن کے لیے دی گئی درخواست کی رسید اپنے پاس رکھیں۔

ضابطہ اخلا ق میں وفاق المساجد نے لاﺅڈ سپیکرکے ناجائز استعمال کوروکنے کے قانون پر عمل کرنے، جمعہ کے عربی خطبہ اور مسنون اذان کے علاون لاﺅڈ سپیکر کا استعمال نہ کرنے نیز خطبات جمعہ ، دروس قرآن اور دیگر اجتماعات میں دوسرے مکتبہ فکر کے خلاف کسی بھی قسم کی توہین آمیز اور شر انگیز گفتگو نہ کرنے کے عزم کا بھی اظہار کیا۔


دوسری جانب جمعیت العلمائے پاکستان اوردیگرسنی جماعتوں نے 14 فروری کولاؤڈ اسپیکر کے استعمال پرپابندی کے خلاف احتجاج کا اعلان کیا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں