The news is by your side.

Advertisement

نوازشریف نے اپنے خلاف 143 کیسزختم کروائے، طاہرالقادری

اسلام آباد: ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا ہے کہ موجودہ حکمران جمہوری نظام کونہیں بلکہ نظام کے باعث ہونے والی کرپشن کو بچانے کے لئے کمربستہ ہیں

ڈاکٹرطاہرالقادری اسلام آباد میں انقلاب مارچ دھرنے کے شرکاء سے خطاب کررہے تھے اورانہوں نے کہا کہ انقلاب مارچ نے پورے ملک میں شعور پیدا کردیا ہے۔

انکا کہنا تھا کہ سارا سال پارلیمنٹ سے غائب رہنے والے وزیرِاعظم پارلیمنٹ کی تاریخ کے طویل ترین اجلاس میں مسلسل حاضر رہے اوراس کی وجہ یہ احتجاج ہے۔

انہوں نے کہا کہ پارلیمنٹ میں آئین کا شور مچانے والے ہی آئین کی دھجیاں بکھیرتے ہیں، ہم اس نظام کو جمہوریت مانتے ہیں جس میں عام آدمی ریاست کے سربراہ کا محاسبہ کرسکیں۔

انہوں سوال کیا کہ حکمران بتائیں کہ پاکستان میں یہ کیسی جمہوریت ہے جہاں انسان اور جانور ایک ہی جگہ سے پانی پیتےہیں۔

انہوں روزمرہ کے استعمال کی اشیا کی قیمتوں کا پرویز مشرف کے دور سے موازنہ کرتے ہوئے سوال کیا کہ بتایا جائے کہ مہنگائی اتنی کیوں بڑھ گئی ہے؟۔

طاہرالقادری کا کہنا ہے کہ موجودہ حکمران نظام کونہیں بلکہ نظام کے باعث ہونے والی کرپشن کو بچانے کے لئے کمربستہ ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ نوازشریف نے چیئرمین نیب اور ڈائریکٹر اپنی مرضی سے تعینات کئے اوراپنے خلاف 143 کیسز ختم کروائے۔

ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ ہمیں الزام دیاجاتا ہے کہ ہمارے دھرنے عالمی دنیا میں پاکستان کا چہرہ مسخ کررہے ہیں، حکومت بتائے کہ وہ کون سے پاکستان کاچہرہ دنیا کے سامنے پیش کررہے ہیں جہاں لوگ مارے جاتے ہیں اورمقدمہ درج نہیں ہوتا،لڑکیاں اغوا ہوجاتیں ہیں اوران کے والدین کی سنوائی نہیں ہوتی، غریب کےحقوق پامال ہوتے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں