The news is by your side.

Advertisement

نیپال میں اٹھارویں سارک سربراہ کانفرنس کا آغاز

کھٹمنڈو: نیپال کے دارالحکومت کٹھمنڈو میں اٹھارویں سارک سربراہ کانفرنس کا آغاز ہوگیا ہے، جس میں پاکستان کے علاوہ سری لنکا، بنگلہ دیش، بھوٹان، بھارت، افغانستان اور مالدیپ کے رہنما شرکت کررہے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق کٹھمنڈو میں نیپال کے وزیراعظم سوشیل کوائرالہ نے شمع روشن کرکے اٹھارویں سارک سربراہ کانفرنس کا آغازکیا ہے۔ اس موقع پر نیپال کے وزیراعظم نے کہا کہ ترقی کے لئے رکن ممالک کے درمیان رابطوں کو فروغ دینے کی ضرورت ہے۔

بھارتی وزیراعظم نریندرمودی نے اپنے خطاب میں کہا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ کے لئے مشترکہ کوششیں کرنا ہوں گی۔ انھوں نے کہا کہ علاقائی تعاون کوفروغ دینے کی ضرورت ہے اور جنوب ایشیائی ممالک بتدریج قریب آرہے ہیں۔

افغانستان کے صدراشرف غنی نے کہا کہ امن وخوشحالی کے لئے مضبوط رابطے ناگزیر ہیں۔ انھوں نے کہا کہ خطے کے ممالک میں تعاون کی فضا قائم ہونا چاہئیے۔

سری لنکا کے صدر مہندرا راجا پکسے نے کہا کہ جنوب ایشیائی ملکوں کوکئی چیلنجز کا سامنا ہے اور سارک اعتماد سازی کے لئے اہم کردارادا کرسکتا ہے۔

اس موقع پر وزیراعظم نوازشریف نے کہا ہے کہ دہشت گردی پرقابو پانے کے لئے سارک ممالک میں معلومات کا تبادلہ ضروری ہے اور ایشیائی ممالک کی معاشی ترقی ایک دوسرے سے جڑی ہے۔ انھوں نے سارک ممالک کو کئی مسائل کا سامنا ہے اور رکن ممالک کو غربت اور بھوک جیسے مسائل کا سامنا ہے، غربت کے خاتمے اور ترقی کیلئے مشترکہ کوششوں کی ضرورت ہے، دہشت گردی پر قابو پانے کیلئے کراس بارڈر معلومات کو شیئر کرنا ہوگا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں