The news is by your side.

Advertisement

گرین لائن بس منصوبے پر وزیر ٹرانسپورٹ سندھ کا بڑا بیان سامنے آ گیا

کراچی: گرین لائن بس منصوبے پر وزیر ٹرانسپورٹ سندھ اویس شاہ کا بڑا بیان سامنے آ گیا ہے، انھوں نے گورنر سندھ کے بیان پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ گرین لائن فروری میں شروع نہیں ہو سکتی۔

تفصیلات کے مطابق اویس شاہ نے کہا ہے کہ گرین لائن بس منصوبے کا فروری میں افتتاح نا ممکن ہے، منصوبے کو سندھ حکومت نے مکمل سپورٹ کیا ہے، تاہم وفاق جو اعلان کرتا ہے، اس پر یو ٹرن نہ لے۔

صوبائی وزیر ٹرانسپورٹ نے کہا کہ وفاق اگر نیت کر لے تو اس منصوبے کو جلد مکمل کر لیا جائے گا، منصوبے کے لیے بسوں کی خریداری میں ایک سال لگ سکتا ہے، صوبائی حکومت کرایہ اور سبسڈی کے لیے پلان بنا کر دے چکی ہے۔

خیال رہے کہ گورنر سندھ عمران اسماعیل نے گرین لائن منصوبے کا فروری 2020 میں افتتاح کا اعلان کیا ہے، تاہم گرین لائن منصوبے پر تا حال کام جاری ہے، بیش تر اسٹیشنز ابھی تک نا مکمل ہیں اور ملازمین کو 2 ماہ سے تنخواہیں بھی ادا نہیں کی گئیں۔

یہ بھی پڑھیں:  وزیر اعظم گرین لائن منصوبے کا افتتاح کریں گے: گورنر سندھ

گزشتہ روز گورنر سندھ عمران اسماعیل نے اعلان کیا کہ گرین لائن منصوبے کا افتتاح سات فروری کو کر دیں گے، جس پر صوبائی وزیر ٹرانسپورٹ نے ان کی دی ہوئی تاریخ کو حقایق کے منافی قرار دیا، انھوں نے کہا گورنر سندھ کو سوچ سمجھ کر بولنا چاہیے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق گرین لائن منصوبے کا ٹریک کئی مقامات پر نا مکمل ہے، اسٹیشن ادھورے پڑے ہیں، بسوں کا کچھ پتا نہیں، اس کے باوجود گورنر سندھ نے بیان جاری کیا کہ سات فروری کو ٹریک پر بسیں رواں دوں ہو جائیں گی، اویس شاہ نے ان کےاعلان پر تنقید کی اور کہا منصوبے کا فروری میں افتتاح نا ممکن ہے۔ پی ٹی آئی کے رکن صوبائی اسمبلی جمال صدیقی کہتے ہیں جب تک بسیں فراہم کرنے والی کمپنی تاریخ نہیں دیتی، منصوبے کے افتتاح کی تاریخ نہیں دے سکتے، دوسری طرف گورنر سندھ کے اعلان اور صوبائی وزیر کے اختلافی بیان کے بعد ایک بار پھر یہ معاملہ لٹکتا ہوا نظر آ رہا ہے، شہری بھی سوال کر رہے ہیں کہ کیا یہ منصوبہ 2020 میں مکمل ہو جائے گا؟

Comments

یہ بھی پڑھیں