site
stats
اہم ترین

گستاخانہ خاکوں کیخلاف کراچی اور لاہور میں جماعت اسلامی کا ملین مارچ

کراچی: فرانسیسی میگزین میں گستاخانہ خاکوں کی اشاعت کے خلاف مذہبی جماعتوں کے تحت کراچی میں احتجاجی ریلیاں اور ملین مارچ نکالے گئے، مذہبی رہنمائوں نے فرانسیسی حکومت سے معافی اور فرانسیسی مصنوعات کے بائیکاٹ کا مطالبہ کر دیا،سراج الحق کا کہنا ہے کہ ناموس رسالت ﷺ پر خون کا آخری قطرہ بھی قربان کر دینگے ۔

فرانسیسی جریدے میں شائع ہونے والے توہین آمیز خاکوں کے خلاف کراچی میں مذہبی جماعتوں کی جانب سے سرور کائنات ﷺ سے محبت کے اظہار اور دین اسلام کے خلاف ہونے والی سازشوں سے نفرت کے اظہار کے لیے احتجاجی مظاہرے اور ملین مارچ کیے گئے ۔

جماعت اسلامی کے تحت یونیورسٹی روڈ پر ملین مارچ سے خطاب میں سراج الحق کا کہنا تھا کہ ناموس رسالت ﷺ پر خون کا آخری قطرہ بھی قربان کر دیں گے،تمام سیاسی جماعتیں ناموس رسالت ﷺ پر متحدہ ہو جائیں ۔

سراج الحق کا کہنا تھا کہ انہوں نے مسلم ممالک کے رہنماؤں کوکہا ہے کہ ملکراحتجاج کرتے ہیں۔ وزیراعظم سے اپیل کی تھی کے او آئی سی کا اجلاس بلائیں۔ اوآئی سی کا اجلاس نہ بلانے پرمختلف ممالک کے سربراہوں سے رابطہ کیا۔

 امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ فرانسیسی مصنوعات کا بائیکاٹ اور سفیر کو ملک بدر کیا جائے
تحریک حرمت رسول کےتحت کراچی میں ملین مارچ کیا گیا جس کی قیادت پروفیسر حافظ محمد سعید نے کی، حافظ سعید نے کہا کہ وزیراعظم پاکستان اسلام آباد میں تمام مسلم حکمرانوں کا اجلاس بلا کر ناموس رسالت ﷺ پر عالمی سطح پر قانون سازی کرائیں ۔

اس موقع پر امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے ایم کیوایم کے قائد الطاف حسین کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ریلی فرانس کے سفارت خانے کی جانب جارہی تھی، نائن زیرو تو نہیں گئی تھی۔

 گستاخانہ خاکوں کے خلاف جمعیت علمائے پاکستان نے محمد انس نورانی کی قیادت میں ریلی نکالی، مذہبی رہنمائوں نے خاکوں کو عالمی دہشت گردی قرار دیتے ہوئے کہا کہ گستاخ رسول ﷺ کا پیچھا نہیں چھوڑیں گے۔

گستاخانہ خاکوں کے خلاف جماعت اسلامی کے زیر اہتمام لاہور میں شان مصطفی ملین مارچ کیا گیا، دیگر مذہبی اور سیاسی جماعتوں کے رہنماوں کے ہمراہ لیاقت بلوچ نے اسلامی سربراہی کانفرنس کا مطالبہ کرتے ہوئے واضح کیا کہ گستاخ رسول کی سزائے موت پر تمام آئمہ کا اتفاق ہے ۔

فرانسیسی میگزین میں گستاخانہ خاکوں کے خلاف جماعت اسلامی کا ملین مارچ ناصر باغ سے شروع ہوا، شرکاءرسول کریم ﷺسے اظہار محبت کرتے ہوئے پنجاب اسمبلی کے سامنے پہنچے جہاں مارچ جلسے کی شکل اختیار کرگیا ۔

ملین مارچ سے دیگر جماعتوں کے قائدین نے خطاب کرتے ہوئے مسلم حکمرانوں کو سخت پیغام دینے کا مطالبہ کیا ، قائدین رہنماوں کا کہنا تھا کہ حکمران گستاخ رسول پر مصلحت کا شکار ہونے کی بجائے عوام کے جذبات کی ترجمانی کریں۔

 ملین مارچ میں مسلم لیگ ن لاہور کے صدر پرویز ملک نے حکمران جماعت کی نمائندگی کی،پرویز ملک ملین مارچ میں خواتین اور بچوں کی بڑی تعداد نے بھی شرکت کرکے رسول اکرمﷺ سے محبت کا اظہار کیا، ہندو اور مسیحی رہنماوں نے بھی شرکت کی۔

مظاہرین نے فرانس کی حکومت کے خلاف شدید نعرے بازی کی اور مطالبہ کیا کہ حکومت پاکستان فرانس سے تعلقات ختم کرکے اسکے سفیر کو واپس بھیجے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top