site
stats
سائنس اور ٹیکنالوجی

پنیر سے بنی 11 کروڑ کی گھڑی

برن: سوئزرلینڈ کی معروف گھڑی ساز کمپنی نے اعلیٰ معیار کے پنیر پر مشتمل ایک ایسی دستی گھڑی تیار کی ہے جس کی قیمت پاکستانی 11 کروڑ روپے ہے۔

تفصیلات کے مطابق یہ منفرد گھڑی’ ایچ موسر اینڈ سائی کمپنی‘ نے تیار کی ہے اور گھڑی کا کیس پنیر سے بنا ہے، گھڑی کا بیرونی کیس پیلے رنگ کا ہے جو سوئزرلینڈ کے مشہور پنیر سے بنایا گیا ہے، اسے پاسچر عمل سے گزارا گیا، یہ پنیر نہ ہی خراب ہوتا ہے اور نہ ہی کوئی بو خارج کرے گا۔

پنیر سے بنی ہوئی اس گھڑی کے بقیہ پرزے بھی سوئزرلینڈ میں بنائے گئے ہیں اور اسی لیے اسے 100 فیصد سوئز پراڈکٹ کہا گیا ہے۔ کمپنی کے مطابق اس منفرد اورحیرت انگیز گھڑی کوبنانے کا مقصد سوئزرلینڈ کی دو مشہور چیزوں یعنی پنیر اور میکانکی گھڑیوں کو ایک جگہ پیش کرنا ہے۔

swiss

گھڑی کا کیس ویکرین مونٹ پنیر پر مشتمل ہے جب کہ گھڑی کا پٹہ سوئزرلینڈ کی مشہور گائے کی کھال سے بنایا گیا ہے۔ گھڑی کے اندر کے ڈائل کو سوئزرلینڈ پرچم کی مناسبت سے آتشیں سرخ بنایا گیا ہے جبکہ چار سفید خانے گھنٹے کے چار حصوں کی نشاندہی کرتے ہیں۔

گھڑی کی قیمت دس لاکھ یورو ہے جسے پاکستانی کرنسی میں تبدیل کرنے پر یہ رقم 11 کروڑ روپے سے زائد بنتی ہے۔

کمپنی کے سی ای او میلان کا کہنا ہے کہ اس گھڑی کی فروخت سے حاصل ہونے والی رقم ان مقامی گھڑی سازوں پر خرچ کی جائے گی جو کہ مشکل مالی حالات سے گزررہے ہیں اور اپنا زیادہ تر کام ایشیائی مارکیٹوں کو دینے پر مجبور ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top