The news is by your side.

Advertisement

مقبوضہ کشمیر میں غیر قانونی بھارتی اقدام کو 11 ماہ مکمل ہوگئے

سری نگر: مقبوضہ کشمیر میں غیر قانونی بھارتی اقدام کو 11 ماہ مکمل ہوگئے، بھارتی فورسز نے 11 ماہ سے مقبوضہ وادی کو جیل بنائے رکھا ہے۔

تفصیلات کے مطابق مقبوضہ وادی کی خاص قانونی حیثیت ختم کرنے اور لاک ڈاون کو پورے 11 ماہ مکمل ہوگئے لیکن مودی سرکار اپنے ناپاک عزائم سے تاحال باز نہ آئی، وادی میں قابض فوج نے بربریت کی انتہا کردی ہے۔

بھارتی لاک ڈاؤن کے11 ماہ میں 192کشمیری شہید اور 132 زخمی ہوئے۔ 11ماہ کے دوران بھارتی فورسز نے 935 مکانات کو نقصان پہنچایا۔ بھارتی فورسز نے گھر گھر چھاپوں کےدوران 77 خواتین کو زیادتی کا نشانہ بنایا۔

ہزاروں کشمیری نوجوان جیلوں میں ہیں، کشمیری رہنما گھروں میں قید ہیں۔ مودی سرکار نے 5اگست2019 کو مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کی تھی۔

مقبوضہ کشمیر میں ذرائع نقل وحمل اور ہر طرح کے مواصلاتی رابطے منقطع ہیں، کشمیری گھروں میں محصور ہو کر رہ گئے ہیں۔ وادی میں کرفیو اور لاک ڈاؤن کے باعث ٹرانسپورٹ اور کاروباری سرگرمیاں معطل ہیں جبکہ تعلیمی ادارے بھی تاحال بند ہیں، بھارتی فوج گھروں سے نکلنے والے سیکڑوں کشمیری نوجوانوں کو گرفتار کرچکی ہے۔

یاد رہے کہ 5 اگست کو بھارتی وزیر داخلہ امیت شاہ نے آرٹیکل 370 ختم کرنے کا بل بھارتی پارلیمنٹ میں پیش کیا تھا۔ جس کے تحت اب غیر مقامی افراد مقبوضہ کشمیر میں سرکاری نوکریاں حاصل کر سکیں گے اور 370 ختم ہونے سے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت بھی ختم ہورہی ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں