The news is by your side.

Advertisement

17 ارب ریال: سعودیوں اور غیرملکیوں کا برا انجام!

ریاض: سعودی عرب میں 17 ارب ریال کی منی لانڈرنگ میں ملوث ملزمان (مقامی وغیرملکی) کو عدالت نے 20 سال قید کی سزا سنا دی ہے۔

عرب میڈیا کی رپورٹ کے مطابق مملکت میں ریاض اپیل کورٹ نے 17 ارب ریال کی منی لانڈرنگ کیس میں ملوث منظم گروہ کے خلاف سزا سنائی، گروپ میں سعودی اور غیرملکی شامل تھے۔

اپیل کورٹ نے فیصلہ کیا ہے کہ منی لانڈرنگ کیس میں مجرم ثابت ہونے والے سعودی شہریوں کو قید کی مدت کے بقدر بیرون مملکت سفر کی اجازت نہیں ہوگی جبکہ غیرملکی مجرمان کی سزا مکمل ہونے پر انہیں سعودی عرب سے بے دخل کردیا جائے گا۔ عدالت نے چوبیس ملزمان پر 75 ملین ریال سے زیادہ جرمانے بھی کیے۔

عدالت نے اربوں ریال کے بقدر منی لانڈرنگ کے لیے جمع شدہ رقم ضبط کرنے کا بھی حکم دیا ہے۔

خیال رہے کہ جرائم پیشہ عناصر تجارتی اداروں کے نام استعمال کرکے منی لانڈرنگ کررہے تھے۔ فیکٹریوں، کمپنیوں، اداروں اور میڈیکل کلینکس کے ذریعے منی لانڈرنگ کا چکر چلائے ہوئے تھے۔

رپورٹ میں بتایا گیا کہ ملزمان میں سے بعض براہ راست منی لانڈرنگ میں ملوث تھے۔ دیگر شریک کار کے طور پر کام کررہے تھے جبکہ بعض رقمیں جمع کرکے باہر بھجوا رہے تھے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں