The news is by your side.

Advertisement

3 ہزار سال قدیم جانور، جسے انسان نے حملے کر کے معدوم کردیا

اب سے 3 ہزار سال قبل زمین پر موجود ایک خطرناک جانور، جو مگر مچھ سے مشابہ ہے، انسانوں کی جانب سے اس قدر بہیمانہ حملوں کا نشانہ بنایا گیا کہ اس کی نسل معدوم ہوگئی۔

بین الاقوامی ویب سائٹ کے مطابق چین میں 3 ہزار سال قبل گھومنے والے 19 فٹ لمبے مگر مچھ جیسی قدیم مخلوق کو رسماً سر کاٹ کر مارنے کا انکشاف ہوا ہے۔

ماہرین کا خیال ہے کہ نو دریافت شدہ قسم کو صدیوں تک بے رحمی سے شکار کر کے ناپید ہونے تک انسانوں نے پہنچایا، ماہرین نے 3 ہزار سے 34 سو سال قبل مارے جانے والی 2 مخلوقات کی جزوی طور پر محفوظ باقیات کا تجزیہ کیا۔

ماہرین نے دریافت ہونے والی نئی قسم کا نام ہانیوسوچس سائینینس کے نام پر رکھا، یہ نویں صدی کے شاعر تھے جنہوں نے جنوبی چین کے صوبے گونگ ڈونگ کے دریائے ہان کا ڈیلٹا چھوڑنے کے لیے مگرمچھوں کو خبردار کیا تھا۔

تاریخی روایات کے مطابق ہان یو، جو ٹینگ سلطنت کے دوران حکومتی عہدے دار بھی تھا، نے ان مخلوقات سے چھٹکارہ پانے کے لیے ایک خنزیر اور بکری بھی قربان کی تھی۔

لیکن بد قسمتی سے وہ وہاں باقی رہے اور کہا جاتا ہے کہ سینکڑوں سال بعد جب جنوبی چین میں انسانوں نے ہجرت کی اور شکار شروع کیا تو وہ ان کی نسل ناپید ہوتی گئی۔

اس سے قبل یہ جانور انسانوں کا ہدف ہونے کے باوجود قدیم چین میں خطرناک شکاری تھا، یونیورسٹی آف ٹوکیو کی ماہرین کی ٹیم کو باقیات پر شدید حملوں اور حتیٰ کہ سر کاٹنے کے شواہد بھی ملے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں