The news is by your side.

Advertisement

کینیڈا میں اسلامو فوبیا کا ایک اور واقعہ ، مرد اور خاتون کی زبردستی مسجد میں داخل ہونے کی کوشش

ٹورنٹو : کینیڈا کے دارالحکومت ٹورنٹو میں  ایک مرداورخاتون نے زبردستی مسجد میں داخل ہونے کی کوشش کی اور دھمکیاں بھی دیں ، پولیس نے دونوں کو گرفتار کرلیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کینیڈا کے دارالحکومت ٹورنٹو میں اسلامو فوبیا کا ایک اور واقعہ سامنے آیا ، جہاں ایک مرداورخاتون کی زبردستی مسجدمیں داخل ہونے کی کوشش کی۔


عینی شاہدین نے بتایا کہ اسکار بورو ایریا میں خاتون اور مرد نے مسجد میں زبردستی گھسنے کی کوشش کی اور دھماکا خیز مواد لگانے کی بھی دھمکی دی جس پر فوری پولیس کو بلایا گیا۔

کینیڈین پولیس نے مسجد میں گھسنے کی کوشش کرنے والے دونوں افراد کو گرفتار کرلیا اور کہا مسجدمیں گھسنےکی کوشش کرنےوالےنشےمیں تھے، واقعے کے بعد ہیٹ کرائم یونٹ کو بھی مطلع کردیا، واقعہ نفرت انگیز ی کا ہے یا نہیں ،تحقیقات جاری ہے۔

میئرٹورنٹو نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ اس طرح کے واقعات نا قابل قبول ہیں،مجرمانہ رویہ ہے، واقعےکی شدیدمذمت کرتے ہیں،مسلم برادری کیساتھ ہیں، اسلامو فوبیا سے نمٹنےکیلئے ہر ممکن اقدام کریں گے۔

واضح رہے 6 جون کو کینیڈا کے شہر لندن انٹاریو میں دہشت گردی کے واقعے میں ایک خاندان کے چار افراد 46 سالہ فزیوتھراپسٹ سلمان افضل، ان کی اہلیہ اور پی ایچ ڈی کی طالبہ 44 سالہ مدیحہ سلمان، نویں جماعت کی طالبہ 15 سالہ یمنیٰ سلمان اور اُن کی 74 سالہ ضعیف دادی کو ٹرک کے نیچے روند ڈالا تھا۔

کینیڈا کے وزیراعظم جسٹن ٹروڈو نے اس حملے کی مذمت کرتے ہوئے اسے دہشت گردی قرار دیا تھا۔ 20 سالہ ملزم یتھینیل ویلٹمین پر قتل کے چار اور اقدامِ قتل کا ایک الزام عائد کیا گیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں