The news is by your side.

Advertisement

افریقی بچوں نے ذاتی کاموں میں مدد کے لیے روبوٹ تیار کرلیے

افریقی ملک نائجیریا میں 2 بچوں نے ایسے ذاتی روبوٹ تیار کیے ہیں جو گھر کے کاموں میں ان کی مدد کرسکتے ہیں۔ دونوں بچوں کی عمریں 12 سال ہیں۔

اوولولا اور فتحیہ عبدالہی نامی ان دو بچوں نے صرف ایک سال قبل ہی کوڈنگ کرنا سیکھی ہے اور اب ایک سال بعد وہ اس قابل ہوگئے ہیں کہ اپنے ذاتی کاموں کی مدد کے لیے روبوٹ تیار کرسکیں۔

اوولولا کا روبوٹ چیزوں کو پہچان کر انہیں ایک سے دوسری جگہ پر منتقل کرسکتا ہے جبکہ فتحیہ کا روبوٹ کپڑے دھونے کے بعد انہیں تہہ کر کے رکھ سکتا ہے۔

فتحیہ کہتی ہیں کپڑوں کو تہہ کرنا انہیں ایک مشکل عمل لگتا تھا چنانچہ انہوں نے ایسی مشین تیار کرنے کا سوچا جو ان کی مدد کرسکے۔ مستقبل میں وہ فوڈ سائنٹسٹ بننا چاہتی ہیں۔

دوسری جانب اوولولا روبوٹک انجینئر بننے کی خواہش رکھتا ہے۔ دونوں بچوں کی ذہانت کو دیکھتے ہوئے یہ کہنا مشکل نہیں کہ یہ مستقبل میں ضرور اپنی منزل حاصل کرلیں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں