The news is by your side.

Advertisement

‘اب بات صرف عمران خان سے ہوگی ‘

لاہور: جہانگیر ترین گروپ کی پنجاب کے صوبائی وزرا سے ملاقات میں کوئی پیش رفت نہ ہوسکی جس کے بعد انہوں نے مزید بات چیت سے انکار کردیا ہے۔

آے آر وائی نیوز کے مطابق ترین گروپ مانئس عثمان بزدار پر ڈٹ گیا اور مطالبے سے دستبردار ہونے سے صاف انکار کردیا ہے۔

ترین گروپ کے سرکردہ رہنما عون چوہدری کا کہنا ہے کہ ہم نے صوبائی سطح پر مزید بات چیت سے انکار کردیا ہے، عثمان بزدار کو ہٹانےکے بعد ہی مذاکرات نتیجہ خیز ہوسکتے ہیں۔

عون چوہدری نے کہا کہ عثمان بزدار کو ہٹائے بغیر معاملات آگےنہیں بڑھ سکتے، پہلےبزدار کی تبدیلی پھر دیگر ایجنڈے پر بات چیت ہوگی،ہم مائنس عثمان بزدار کے مطالبے پر کھڑے ہیں، مراد راس کی عزت کرتےہیں، اب بات صرف عمران خان یا وفاقی وزرا سے ہونگی۔

یہ بھی پڑھیں: حکومت نے جہانگیر ترین گروپ کو منانے کی کوششیں مزید تیز کردیں

ترین گروپ کے رہنما کا کہنا تھا کہ ہم مائنس عثمان بزدار کے مطالبے پر کھڑے ہیں، ہماری حکومت کیساتھ کسی قسم کا کوئی ورکنگ ریلیشن شپ نہیں، ترین گروپ کی وزیراعلیٰ سے ملاقاتوں میں کوئی حقیقت نہیں، سوشل میڈیا پر وزرا اور ارکان اسمبلی کی ملاقاتوں کی پرانی تصاویر نکالی جارہی ہیں۔

عون چوہدری نے واضح کیا کہ ترین گروپ جہانگیر ترین کی قیادت میں متحد اور مشترکہ فیصلےکررہاہے۔

ادھر ذرائع کا کہنا ہے کہ ایم این ایز کے بعد ترین گروپ کے ایم پی ایز میں بھی ٹوٹ پھوٹ کا عمل شروع ہو گیا، گروپ کے 5 ایم پی ایز نے وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سے ملاقاتیں کی ہیں۔

یہ ملاقاتیں گزشتہ ہفتے لاہور ہی میں ہوئی تھیں، ملاقات کرنے والوں میں تیمور لالی، بلال اصغر، افتخار گوندل، فیصل حیات اور اسلم بھروانہ شامل تھے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں