The news is by your side.

پٹاخہ پھاڑنے سے منع کرنے پر نوجوان کا لرزہ خیز قتل

ممبئی : بھارت میں تین نو عمر لڑکوں نے نہتے نوجوان کو چھریوں کے وار سے قتل کردیا، مقتول کا قصور صرف یہ تھا کہ اس نے لڑکوں کو بوتل بم پھاڑنے سے منع کیا تھا۔

بھارتی ریاست مہاراشٹرا کے شہر ممبئی میں ایک دل دہلا دینے والا واقعہ پیش آیا ہے جس کی ویڈیو جائے وقوعہ پر لگے سی سی ٹی کیمرے میں محفوظ ہوگئی۔

یہ ہولناک واقعہ ممبئی کے شیواجی نگر کے نٹور پاریکھ کمپاؤنڈ میں دیوالی کے موقع پر پیش آیا جس میں تین نو عمر لڑکوں نے ذرا سی بات پر نوجوان کو چھری کے پے در پے وار کرکے موت کے گھاٹ اتار دیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق چند لڑکے دیوالی کی خوشی میں عام پٹاخوں کے بجائے شیشے کی بوتل کا بم پھاڑ رہے تھے کہ وہاں موجود 21 سالہ نوجوان نے انہیں ایسا کرنے سے منع کیا۔

بم پھاڑنے سے منع کرنے پر 12، 14 اور 15سالہ لڑکوں نے طیش میں آکر پہلے سنیل شنکر نائیڈو نامی نوجوان سے تلخ کلامی کی اور ہاتھا پائی کرنے لگے۔

سب لڑکوں نے مل کر سنیل پر بہیمانہ تشدد کیا اور پھر ان ہی میں سے ایک لڑکے نے چھرا نکال کر نوجوان کی گردن میں گھونپ دیا اور فرار ہوگیا۔

ویڈیو میں دکھایا گیا ہے کہ گردن میں چھرا لگنے کے باوجود زخمی نوجوان اپنی گردن سے بہنے والے خون کو روکنے کیلئے زخم پر ہاتھ رکھ کر اسے پکڑنے کیلئے پیچھے بھاگتا ہے۔

تاہم زیادہ خون بہہ جانے کے باعث وہ سیڑھیوں پر ہی نڈھال ہوکر گر جاتا ہے بعد ازاں سنیل کو فوری طور پر اسپتال لے جایا گیا لیکن وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسا۔

علاقہ پولیس نے فوری کارروائی کرتے ہوئے واقعہ کا مقدمہ درج کرلیا اور تین میں سے دو ملزمان کو گرفتار کرلیا جبکہ تیسرے ملزم کی تلاش میں چھاپے مارے جارہے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں