The news is by your side.

Advertisement

کراچی: مذہبی جماعت کے پر تشدد مظاہروں میں 35 پولیس اہلکار زخمی ہوئے

کراچی : شہر قائد میں مذہبی جماعت کے پر تشدد مظاہروں میں 35 پولیس اہلکار زخمی ہوئے ، جن میں ایس ایس پی ملیر عرفان بہادر بھی شامل ہیں۔

تفصیلات کے مطابق تحریک لبیک پاکستان کے کارکنان کی اشتعال انگیزی اور ہنگامہ آرائی میں 35 پولیس اہلکار زخمی ہوئے جبکہ ایس ایس پی ملیر عرفان بہادر بھی پرتشددواقعات کے زخمیوں میں شامل ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ پولیس نے مجموعی طور پر 16 مقدمات درج کرلیے اور کارروائیوں کے دوران 183 افراد کو گرفتار کیا گیا۔

پولیس حکام نے کہا کراچی کےکسی مقام پر احتجاج یا ٹریفک بلاک نہیں ہے، تمام حساس مقامات پر پولیس کی نفری اسٹینڈ بائے پر موجود ہے۔

حکام نے بتایا ایڈیشنل آئی جی کراچی کی جانب سے زخمیوں کے لیے انعام کا اعلان کیا گیا ہے ، تمام زخمی اہلکاروں کو 10 ہزارنقداور تعریفی اسناد دی گئیں۔

پولیس کا کہنا تھا کہ شرپسند عناصر کو کسی قسم کی رعایت نہیں دی جائے گی، شہریوں کی حفاظت کے لیے پولیس ہر وقت موجود ہے۔

یاد رہے  گذشتہ روز محکمہ داخلہ سندھ نے قانون کی خلاف ورزی پر تحریک لبیک پاکستان (ٹی ایل پی) کراچی کے تین رہنماؤں کو گرفتار کرنے کے احکامات جاری کیے تھے۔

محکمہ داخلہ نے قانون نافذ کرنے والے اداروں کو ٹی ایل پی کے تین رہنماؤں کو گرفتار کرنے کی ہدایت کی تھی،  رہنما میں مولانا عباس قادری ، مولانا غوث بغدادی اور زین العابدین شامل تھے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں